وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید کا فرنٹیئرز ورکس کی جانب سے بریفنگ کے موقع پر اعلیٰ افسران سے خطاب

اسلام آباد ۔ 11 جنوری (اے پی پی) وفاقی وزیر مواصلات و پوسٹل سروسز مراد سعید نے کہا ہے کہ عوام کو تکالیف اور مشکلات سے نکالنا ہمارا عزم ہے، انہیں پائیدار، سہل اور آرام دہ سفری سہولیات کی فراہمی ہمارا مشن اور مینڈیٹ ہے، آئندہ چند روز میں لاہور۔اسلام آباد موٹروے (M-2) لاہور راوی ٹول پلازہ کو مجوزہ جگہ سے دوسری جگہ پر منتقل کر رہے ہیں جبکہ اسلا م آباد۔پشاورموٹروے (M-1) ٹول پلازے کو مزید لائنوں کے اضافہ کے ساتھ کشادہ کیا جائے گا اور پنڈی بھٹیاں۔فیصل آباد موٹروے(M-3) ٹول پلازہ کو ختم کرنے کی ہدایات جاری رہا ہوں ، حیدر آباد۔کراچی موٹروے(M-9) کے مسائل کیلئے بھی فی الفور اقدامات کئے جائیں، پشاورموٹروے ٹال پلازہ اور سڑک پر لائٹس کی تنصیبات کو یقینی بنایا جائے۔ ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے جمعہ کو وزارت مواصلات میں فرنٹیئرز ورکس آرگنائزیشن کی جانب سے موٹرویز سے متعلق بریفنگ کے موقع پر اعلیٰ افسران سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر چیئرمین نیشنل ہائی وے اتھارٹی جواد رفیق ملک، آئی جی نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس اے ڈی خواجہ، میجر جنرل انعام حیدر ڈائریکٹر جنرل ایف ڈبلیو او سمیت دیگر عسکری و سول اعلیٰ حکام بھی شریک تھے۔ وفاقی وزیر مواصلات و پوسٹل سروسز مراد سعید نے مزید کہاکہ عوام کو ریلیف دے کر ہم ہر قسم کا دباﺅ برداشت کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔شاہراہوں کے نظم ونسق کو سوارنے کیلئے پائیدار ٹھوس اقدامات ہی ہمارا ٹارگٹ ہے۔ انہوںنے مزید کہاکہ موٹرویز پر الیکٹرانک ٹول پلازہ اور ای ٹیگ کو نافذ کردیا جائے گا،مستقبل قریب میں بغیر ایم ٹیگ کے موٹرویز نیٹ ورک پر داخلہ ناممکن ہوجائے گا۔ قبل ازیں ایف ڈبلیو او پراجیکٹ ڈائریکٹر کرنل ضیاءالرحمن نے وفاقی وزیر مواصلات کو بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ لاہور۔اسلام آباد موٹروے (M-2) پر روزانہ 27 ہزار گاڑیوں کی آمدورفت ہے جبکہ ہفتہ وار تعطیلات کے دوران یہ تعداد 31ہزار تک تجاوز کر جاتی ہے جبکہ مینوئل سسٹم کے تحت ٹال پلازے سے 80 گاڑیاں فی منٹ کے حساب سے کراس کر رہی ہیں۔ایم ٹیگ کی بدولت یہ تعداد1200 سے 1800 تک تجاوز کر جائے گی۔ راوی ٹول پلازہ پر 17 بوتھ کام کر رہے ہیں اور 8 اضافی بوتھ کے ساتھ یہ تعداد24 ہوجاتی ہے۔بریفنگ میں بتایا گیا کہ لاہور۔اسلام آباد موٹروے(M-2) پر جدید دور کے تقاضوں کے مطابق ہم آہنگ کرنے کیلئے موبائل ایپ،شبانہ روز ہیلپ لائن،کسٹمر کیئر سینٹر،آئی ایس ایپ،ڈرائیونگ سمارٹ فیوچرز اور ٹریفک کی صورتحال سے متعلق عوام کی پیشگی آگاہی اور معلومات کی فراہمی ،ایف ایم ریڈیو،فائربریگیڈز،تدراک روڈز حادثات،سفری منصوبہ بندی،وائی فائی اور الیکٹرانک ڈیجیٹل کیمروں سے مانیٹرنگ آلات کی تفصیبات سمیت دیگر سہولیات دی گئی ہیں جبکہ انٹیلی جینٹ ٹرانسپورٹیشن سسٹم، ٹریفک سائن بورڈز نصب کئے جارہے ہیں۔بریفنگ میں کہا گیا کہ وزیراعظم پاکستان کے پروگرام کلین اینڈ گرین پاکستان کے تحت آئندہ شجر کاری مہم کے دوران لاہور۔اسلام آباد موٹروے(M-2) پر 2.5 ملین 6 سے8 فٹ سائز کے پھلدار پودے لگائے جائیں گے۔