APP94-11 ISLAMABAD: February 11 - Advisor to the Prime Minister on Commerce Abdul Razak Dawood addressing a press conference. APP

اسلام آباد ۔ 11 فروری (اے پی پی)وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت عبدالرزاق داو¿د نے کہا ہے کہ حکومت کے مثبت اور مو¿ثر فیصلوں سے معیشت بہتر سمت میں گامزن ہے، برآمدات میں اضافہ ہوا ہے اور درآمدات میں نمایاں کمی ہوئی ہے، حکومتی اقدامات سے تجارتی خسارہ 2 ارب ڈالر کی کمی سے 19 ارب 20 کروڑ ڈالر تک آ گیا ہے، روپے کی قدر میں کمی کے آئندہ 5 ماہ میں فوائد نظر آنا شروع ہو جائیں گے، فرنس آئل کی درآمد پر مکمل پابندی عائد کر دی ہے، ریگولیٹری ڈیوٹی لگانے کا فائدہ ہوا ہے، ہماری پالیسی بہتر ہے اور گاڑی بالکل ٹھیک چل رہی ہے جبکہ روپے کی قدر میں کمی کا فائدہ آئندہ 5 ماہ میں نظر آئے گا۔پیر کو یہاں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مو¿ثر قدامات کی بدولت درآمدات میں کمی ہوئی ہے، رواں مالی سال کے 7 ماہ کے دوران 2 ارب ڈالر کی بچت ہوئی ہے جس کا مطلب ہماری پالیسی ٹھیک ہے اور گاڑی بالکل ٹھیک چل رہی ہے، درآمدات سے متعلق آئندہ رہ جانے والے 5 ماہ کے نتائج اور بہتر ہوں گے۔ انہوں نے کہ گزشتہ مالی سال کے پہلے 7 ماہ میں 34.26 ارب ڈالر کی درآمدات ہوئی تھیں جبکہ رواں مالی سال کے پہلے 7 ماہ کے دوران درآمدات 32.54 ارب ڈالر رہیں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ مالی سال کے پہلے 7 ماہ میں تجارتی خسارہ 21.3 ارب ڈالر رہا، رواں مالی سال کے پہلے 7 ماہ میں تجارتی خسارہ 19.2 ارب ڈالر ہے، گزشتہ سال کی نسبت برآمدات میں 2.46 فیصد اضافہ ہوا اور رواں سال برآمدات 7 ماہ میں 13 ارب ڈالر سے زائد رہیں۔ عبدالرزاق داو¿د نے کہا کہ برآمدات میں صرف 4 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ روپے کی قدر میں کمی کا فائدہ آئندہ 5 ماہ میں نظر آئے گا۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکسائل کی برآمدات میں اضافہ کے امکانات روشن ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 7 ماہ میں فرنس آئل کی درآمد میں کمی ہوئی ہے، بجلی بنانے کے دوسرے طریقے اختیار کرنے پر کام کر رہے ہیں جس سے توانائی کی پیداوار میں اضافہ ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ فوڈ آئٹمز اور ٹیکسٹائل برآمدات میں اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملکی سطح پر سیمنٹ کی کھپت میں کمی ہوئی ہے جبکہ مقامی سطح پر سیمنٹ کی مانگ میں 9 فیصد کم ہوئی، سمینٹ کی برآمدات میں 50 فیصد اضافہ ہوا، سیمنٹ سری لنکا اور بنگلا دیش برآمد کیا جا رہا ہے۔آئی ایم ایف سے مذاکرات سے متعلق انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف نے بجلی اور گیس کی قیمت بڑھانے کی کوئی بات نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ ہم کسی نئے آزادنہ تجارتی معاہدے میں دلچسپی نہیں رکھتے۔ وزیراعظم کے مشیر نے کہا کہ فرنس آئل اور غیر ضروری خوردنی اشیا ءکی درآمد پر پابندی سے معیشت کو بھی فائدہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ رواں مالی سال کے گزشتہ سات ماہ میں برآمدات میں 4 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ انہوں نے اس اعتماد کا اظہار کیا کہ رواں سال برآمدات میں اضافہ اور درآمدات میں مزید کمی ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ ریگولیٹری ڈیوٹی لگانے کا فائدہ ہوا ہے جبکہ فرنس آئل کی درآمد مکمل طور پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دسمبر جنوری میں برآمدات 2 ارب ڈالر ماہانہ رہیں، جنوری 2019ءمیں تجارتی خسارے میں 31 فیصد کمی ہوئی ہے۔ اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے سیکرٹری تجارت یونس ڈھاگہ نے کہا کہ جنوری کے مہینے میں تجارتی توازن میں بھی بہتری ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انرجی مکس میں قابل تجدید ٹیکنالوجی کے بڑھتے ہوئے استعمال کے باعث فرنس آئل کی ضرورت میں کمی آئی ہے۔