آئندہ حکومت کیلئے ملک میں ڈیجیٹل اکانومی کے فروغ کے حوالے سے روڈ میپ بنایا گیا ہے، وفاقی وزیر آئی ٹی ڈاکٹر عمر سیف

Dr. Umar Saif
Dr. Umar Saif

اسلام آباد۔11فروری (اے پی پی):نگران وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کمیونیکیشن ڈاکٹر عمر سیف نے کہا ہے کہ آئندہ حکومت کیلئے ڈیجیٹل اکانومی کے فروغ کے سلسلے میں روڈ میپ بنایا گیا ہے۔کراچی میں آئی ٹی ایسوسی ایشن (پاشا)کے زیر اہتمام ٹاؤن ہال میں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگر آئندہ حکومت آئی ٹی کے شعبے میں نگران حکومت کے اقدامات کو جاری رکھے تو ملک اربوں ڈالر کا ریونیو حاصل کر سکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایس آئی ایف سی فورم ملک کی تعمیر و ترقی کے عمل میں آنے والی منتخب حکومت کیلئے ایک بہترین معاون ثابت ہوگا اوروہ نگران حکومت کے اقدامات کے ثمرات حاصل کرے گی،ہمیں یقین ہے کہ اسپیشل انویسٹمنٹ فیسیلیٹیشن کونسل (ایس آئی ایف سی) کی موجودگی سے آنے والی حکومت بھی ملکی ترقی اور عوامی مفادات کیلئے بروقت فیصلے کر سکے گی کیونکہ ہمیں اپنے معاشی استحکام اور عوامی مفادات پر سمجھوتہ نہیں کرنا چاہیے۔ ڈاکٹر عمر سیف نے آئی ٹی اور ٹیلی کام سیکٹر کو ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ 60 دنوں میں وزارت آئی ٹی کی پالیسیوں کی وجہ سے آئی ٹی کی برآمدات میں ریکارڈ 32 فیصد اضافہ ہوا ہے۔وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ ہم نے نگران سیٹ اپ میں 5 ماہ کی مختصر مدت میں آئی ٹی اور ٹیلی کام سیکٹر کے فروغ کیلئے 15 میں سے 13 اہم اہداف حاصل کر لئے ہیں۔پاشا کے چیئرمین زوہیب خان نے ڈاکٹر عمر سیف کی آئی ٹی سیکٹر کے لیے ان کی غیر متزلزل لگن اور مثالی خدمات پر شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے ڈاکٹر سیف کے اقدامات کی تعریف کی، جس نے صنعت کے اندر نئے اعتماد کو جنم دیا ہے اور برآمدات میں بے مثال ترقی کی راہ ہموار کی ہے۔انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر عمر سیف کی بصیرت انگیز قیادت اور سٹریٹجک دور اندیشی پاکستان کیلئے متحرک اور خوشحال ڈیجیٹل مستقبل کی جانب کورس کو ترتیب دیتی ہے۔اس موقع پر عائشہ مورانی ایڈیشنل سیکرٹری ایم او آئی ٹی ٹی ، ندیم ملک جنرل سیکرٹری پاشااور آئی ٹی انڈسٹری کے نمائندے بھی موجود تھے۔