الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا پر ملک کے معزز ادارے پارلیمان سے لے کرسب کے خلاف مہم کا آغاز کیا جاتا ہے، طاہر اشرفی

حافظ طاہر محمود اشرفی کا سیلاب زدگان کی امداد پر سعودی سفیر سے اظہار تشکر

اسلام آباد۔23جولائی (اے پی پی):چیئرمین پاکستان علماء کونسل مولانا طاہر اشرفی نےہفتہ کے روز اپنے ایک ویڈیو پیغام میں موجودہ سیاسی صورتحال کے حوالے سے کہا کہ پاکستان ایک سیاسی بحران میں ہے اور اس کے نتیجے میں معاشی طور پر بھی پاکستان اور عوام کو مشکلات کا سامنا ہے۔

عالمی دنیا اور پاکستان میں بھی اس صورتحال پر ہر کوئی پریشان ہے۔گزشتہ روز وزیر اعلی پنجاب کا الیکشن ہوا توتوقع کی جا رہی تھی کہ اس کے بعد ملک میں استحکام آئے گا،لیکن افسوس کہ ایک نئی صورتحال پیدا ہوگئی اور اس کے بعد یہ معاملہ سپریم کورٹ کے پاس چلا گیا۔ہم نے چند ماہ میں یہ دیکھا ہے اگرچہ یہ چیزیں ماضی میں بھی تھی لیکن اس طرح نہیں تھا۔

انہوں نے کہا کہ اگر الیکشن کمیشن، سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ کا کوئی فیصلہ آپ کے حق میں ہو تو زندہ باد اور آپ کے خلاف ہو تو مردہ باد کسی بھی ادارے کو پاکستان میں معاف نہیں کیا جا رہا ہے جو قابل مذمت بھی ہے اور قابل افسوس بھی۔ انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا کی کیمپینز، الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا پر ملک کے معزز ادارے پارلیمان سے لے کر افواج پاکستان تک سب کے خلاف مہم کا آغاز کیا جاتا ہے۔اور پھر اس کو پاکستان دشمن قوتیں استعمال کرتی ہیں۔

انہوں نے محترم چیف جسٹس آف پاکستان سے بطور چیئرمین پاکستان علماء کونسل اپیل کی کہ وہ اس ساری صورتحال اور کل کی صورتحال میں فل کورٹ بینچ تشکیل دے تاکہ اس معاملے کا مستقل بنیادوں پر حل نکلے اور پاکستان کو جو عدم استحکام کی طرف چیزیں لے جا رہی ہیں ان کا خاتمہ ہو۔