ستمبر میں پاکستان کو چین سے 72.7 ملین امریکی ڈالر کی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری موصول ہوئی

عوامی جمہوریہ چین کے لاہور میں قونصل جنرل مسٹر چا شیرین

اسلام آباد۔23اکتوبر (اے پی پی):ستمبر میں پاکستان کو چین سے 72.7 ملین امریکی ڈالر کی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری موصول ہوئی جس سے مالی سال 2023-24 کی پہلی سہ ماہی کے دوران دوست ہمسایہ ملک سے مجموعی طور پر 126.3 ملین ڈالر کی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری آئی۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ستمبر میں چین سے ترسیلات زر 84.4 ملین ڈالر ریکارڈ کی گئیں جبکہ بیرون ملک سے ترسیلات زر 11.7 ملین ڈالر رہیں جس کے نتیجے میں 72.7 ملین ڈالر کی خالص آمد ہوئی۔ستمبر میں پاکستان کی مجموعی ایف ڈی آئی میں چین کا حصہ 46.66 فیصد رہا جس میں ملک کو مجموعی طور پر 155.8 ملین ڈالر کی ایف ڈی آئی موصول ہوئی۔

اسی طرح مالی سال 2023-24 کی پہلی سہ ماہی (جولائی تا ستمبر) میں پاکستان کو موصول ہونے والی 412 ملین ڈالر کی ایف ڈی آئی میں سے چین سے سرمایہ کاری 126.3 ملین ڈالر تھی جو کل ایف ڈی آئی کا 30.65 فیصد ہے۔سٹیٹ بینک کے اعداد و شمار کے مطابق مالی سال 23-24 کی پہلی سہ ماہی کے دوران پاکستان کی مجموعی ایف ڈی آئی 412 ملین ڈالر رہی جو گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 28.9 فیصد کا نمایاں اضافہ ہے۔