سعودی عرب کی جانب سے یمن میں بے گھر افراد کے کیمپس میں پانی کی فراہمی کا آغاز

ریاض ۔24جنوری (اے پی پی):سعودی عرب کی جانب سے یمن میں بے گھر افراد کے کیمپس میں پانی کی فراہمی کا آغاز کردیا گیا۔ چینی خبررساں ادارے کے مطابق شاہ سلمان ہیومینٹیرین ایڈ اینڈ ریلیف سنٹر کی فنڈنگ سے شمال مشرقی یمن کی مأرب گورنری میں مقامی اتھارٹی نے چار کیمپوں میں ہزاروں بے گھر لوگوں کو صاف پانی فراہم کرنے کے منصوبے کا آغاز کیا۔ یہ اقدام بے گھر افراد کی محفوظ مقامات تک رسائی کو بڑھانے اور ان مقامات پرپانی کی ترسیل کے منصوبوں کے حصے کے طور پر اٹھایا گیا ہے۔

مأرب گورنریٹ کی ویب سائٹ کے مطابق ایجنٹ عبد ربہ مفتاح نےمأرب شہر کے شمال میں چار کیمپوں میں بے گھر ہونے والوں کو صاف پانی کی فراہمی کے منصوبے کا افتتاح کیا۔ اس منصوبے کی لاگت چھ لاکھ ڈالر ہے ۔ اس منصوبے کو یمن میں نقل مکانی کی بین الاقوامی تنظیم کے ذریعے نافذ کیا گیا ہے۔عبد ربہ مفتاح نے کہا کہ 28 ہزار بے گھر مردوں اور عورتوں کو السویداء، البطحاء، سائلۃ المیل اور حوش الجامعہ کے کیمپوں میں رکھا گیا ہے یہ منصوبہ کنوئیں سے پانی کے لیے پمپنگ یونٹ اور کنکریٹ کے ٹینک پر مشتمل ہے۔ ٹینک میں 300 کیوبک میٹر پانی کی گنجائش ہے۔واضح رہے حوثی ملیشیا کی جانب سے حملوں کے باعث یمن میں بے گھر ہونے والوں کی کل تعداد کا تقریباً 60 فیصد مأرب گورنری میں ہے۔ یہ 42 لاکھ سے زیادہ افراد ہیں۔