معیشت کی بہتری کیلئے حکومت افرادی قوت کی برآمدات کو فروغ دینے پر خصوصی توجہ دے، صدر اسلام آباد چیمبر

Chamber of Commerce

اسلام آباد۔18اکتوبر (اے پی پی):اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے قائم مقام صدر فاد وحید نے کہا کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی ترسیلات قومی معیشت کی بہتری میں کلیدی کردار ادا کر رہی ہیں کیونکہ سالانہ ترسیلات زر ملک کی مجموعی برآمدات سے بھی زیادہ ہیں لہذا انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ زرمبادلہ کے ذخائر کو مزید بہتر کرنے اور معیشت کو جلد بحال کرنے کے لیے حکومت انٹرنیشنل مارکیٹ میں افرادی قوت کی برآمد کو مزید فروغ دینے کے لیے کوششیں تیز کرے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے اوورسیز پاکستانیز اور ہیومین ریسورس ڈویلپمنٹ محمد جواد سہراب ملک سے ملاقات کے دوران کیا۔ پاکستان اوورسیز ایمپلائمنٹ پروموٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین اسد حفیظ کیانی، وائس چیئرمین شکیل احمد عباسی اور سابق سینئر وائس چیئرمین فہیم اقبال چوہدری بھی اس موقع پر ان کے ساتھ تھے۔

فاد وحید نے کہا کہ پاکستان آبادی کے لحاظ سے دنیا کا پانچواں بڑا ملک ہے جس کے پاس انسانی وسائل کا ایک بڑا ذخیرہ موجود ہے اور اس بات پر زور دیا کہ حکومت اپنی افرادی قوت کو جدید ترین ہنر اور علم سے آراستہ کرے تاکہ دنیا بھر کے ممالک میں ان کی برآمدات کے امکانات کو بہتر بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش نے جون 2023 کو ختم ہونے والے سال کے دوران 11لاکھ سے زائد ورکرز باہر بھیجے لیکن پاکستان نے جولائی 22سے مئی23کے دوران 11 ماہ کے عرصے میں صرف 3لاکھ 72ہزار افراد باہر بھیجے جو صلاحیت سے بہت کم ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مشرق وسطیٰ، یورپ اور جنوب مشرقی ایشیا سمیت متعدد ممالک میں ہنر مند افراد کی بہت زیادہ مانگ پائی جاتی ہے لہذا حکومت کو چاہیے کہ وہ اپنی افرادی قوت کو ان ممالک کی مطلوبہ ضرورت کے مطابق ہنر فراہم کرے جس سے ہماری افرادی قوت کی برآمدات میں اضافہ ہو گا اور معیشت جلد بہتری کی طرف گامزن ہو گی۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے اوورسیز پاکستانیز اور ہیومین ریسورس ڈویلپمنٹ محمد جواد سہراب ملک نے اپنے خطاب میں کہا کہ حکومت معیشت کی جلد بحالی کے ہدف کو حاصل کرنے کے لیے پاکستان کی افرادی قوت کی صلاحیت کو بروئے کار لانے کے لیے پرعزم ہے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی سفیر کے ساتھ حالیہ ملاقات کے دوران انہوں نے سعودی عرب کو سعودی ویژن 2030 کے حصول کے لیے خاطر خواہ تعداد میں پاکستانی کارکنوں کو ملازمت دینے کی تجویز دی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت تمام سٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے پاکستان کی افرادی قوت کی برآمدات کو زیادہ سے زیادہ بڑھانے کیلئے تمام ممکنہ کوششیں کرے گی۔ پاکستان اوورسیز ایمپلائمنٹ پروموٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین اسد حفیظ کیانی، وائس چیئرمین شکیل احمد عباسی اور سابق سینئر وائس چیئرمین فہیم اقبال چوہدری نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کے لیے روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے کے لیے حکومت کے ساتھ بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی۔