نچلی سطح پر لوگوں کو چھوٹے کاروباری گروپس کی صورت میں ایک پلیٹ فارم پر لاکر یکساں معاشی فوائد حاصل کئے جا سکتے ہیں، اسلم بھلی

Faisalabad Chamber of Commerce
Faisalabad Chamber of Commerce and Industry

فیصل آباد۔ 17 جنوری (اے پی پی):ایوان صنعت و تجارت فیصل آباد کے نائب صدرمحمد اسلم بھلی نے کہا کہ پاکستان میں غربت کے خاتمے اور دیہی سطح پر روزگار کے مواقع پیدا کرنے کیلئے ترکی کے کامیاب ایس ایم ای ماڈل کو دہرانا ضروری ہے تاکہ صنعتی، کاروباری، تجارتی ترقی ممکن ہو سکے۔ یک ملاقات کے دوران انہوں نے کہا کہ اگرچہ معاشی ماہرین دیہی سطح پر سمال و میڈیم انٹرپرائززاور کوآپریٹوز کو فروغ دینے کیلئے کوشاں ہیں تاہم وہ سمجھتے ہیں کہ اس پیغام کو مزید مؤ ثر انداز میں نچلی سطح پر پہنچایا جا نا ضروری ہے تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو اس پروگرام کا حصہ بنایا جائے۔

نہوں نے کہا کہ نچلی سطح پر لوگوں کو چھوٹے کاروباری گروپس کی صورت میں ایک پلیٹ فارم پر لاکر یکساں معاشی فوائد حاصل کئے جا سکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ترک حکومت مختلف دیہات کو پاکستان میں کاٹیج انڈسٹری کی طرز پر ٹریڈ مارک ویلج کا درجہ دے کر وہاں موزوں کاروباری حالات پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ سہولیات کے دروازے کھول دیتی ہے جس سے دیہی نوجوانوں کومقامی سطح پر ہی روزگار کے مواقع میسر آ رہے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ویلیو ایڈیشن اور مختلف اشیا کی ازسرنوسستی مینوفیکچرنگ کے ذریعے چھوٹے انٹرپرائززخاص طور پر ترقی کر رہے ہیں جس سے دیہی غربت کم کرنے میں مدد مل رہی ہے۔