نگران وزیر اعلیٰ پنجاب محسن نقوی اورسیکرٹری ماحولیات پنجاب کی ہدایات کی روشنی میں سموگ اورآلودگی کی روک تھام کیلئے کریک ڈاؤنزجاری

Mohsin Naqvi

گوجرانوالہ۔ 18 نومبر (اے پی پی):نگران وزیر اعلیٰ پنجاب محسن نقوی اورسیکرٹری ماحولیات پنجاب کی ہدایات کی روشنی میں گوجرانوالہ میں کمشنرگوجرانوالہ ڈوثرن نوید حیدرشیرازی اورڈپٹی کمشنرفیاض احمدموہل کی زیر نگرانی سموگ،آلودگی کی روک تھام کیلئے کریک ڈاؤنزجاری،ضلعی انتظامیہ،ڈپٹی ڈائریکٹر ماحولیات امتیاز احمد چوہدری و دیگر افسران کے باہمی اشتراک سے ضلع بھر جبکہ تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز پر مشتمل ٹیموں نے جاری مہم کے تحت ابتک کی گئی انسدادی کارروائیوں کی تفصیلات جاری کر دیں

جسکے مطابق ضلع بھر میں تمام متعلقہ محکموں محکمہ تحفظ ماحولیات،ٹریفک پولیس،ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی،زراعت،ریونیو،میونسپل اداروں نے تمام محرکات کیخلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی اپناتے ہوئے عدالتی و حکومتی احکامات پر سختی سے عمل درآمد کیا اور یکم اکتوبر سے 15نومبر تک سموگ کا باعث بننے والے عوامل کے خلاف بھرپور کارروائیاں کیں ۔ڈپٹی کمشنر فیاض احمد موہل نے بتایا کہ آلودگی کی روک تھام کے سلسلہ میں جاری مہم کے دوران ضلعی انتظامیہ اور محکمہ ماحولیات کے سپیشل اسکواڈ نے آلودگی پھیلانے والوں کیخلاف دن رات آلودگی پھیلانے والے کارخانوں اور بھٹوں کے خلاف 365 چھاپہ مار کارروائیوں کے دوران 234 خلاف ورزیاں پائیں جس پر 186 فیکٹریوں کو سیل کیاگیا اور 13ایف آئی آرز مختلف فیکٹری مالکان کے خلاف درج کروائی گئیں جبکہ 33بھٹیوں کو مسمارکیا گیا اور 63کو نوٹسسز جاری کئے گئے اس طرح مجموعی طور پر 68لاکھ 20بزار روپے سموگ رولز کے تحت جرمانہ بھی عائد کیاگیا ہے

اس کے علاوہ اینٹوں کے بھٹہ جات کے خلاف بھی 176 انسپکشن کی گئیں 43 بھٹہ جات کو زگ زیگ کے ایس او پیز کی خلات ورزی پر 68لاکھ 20 ہزار روپے جرمانہ عائد کیا گیا 8مالکان کے خلاف ایف آئی آرز درج کرائی گئیں جبکہ 18 بھٹوں کوسیل کیاگیا۔ علاوہ ازیں آلودہ دھواں چھوڑتے والی 5ہزار 437 گاڑیاں مختلف تھانوں میں بند کی گئیں۔ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی نے اسی دوران 519چھاپے مارے،179گاڑیوں گاڑیوں کے چالان کئے 23 گاڑیاں بند کی گئیں اور ایک لاکھ 70 ہزار جرمانہ عائد کیا گیا

ڈپٹی کمشنرگوجرانوالہ فیاض احمد موہل نے کہا کہ آلودگی کی روک تھام اورسموگ کا باعث بننے والے عوامل کے خلاف بھرپور کاروائیاں عمل میں لائی جا رہی ہیں جس کے نتیجے میں گوجرانوالہ میں ایئر کوالٹی انڈکشن میں نمایاں بہتری آئی ہے۔ڈپٹی کمشنر فیاض احمد موہل نے کہا کہ 15 ستمبر سے 16نومبر تک فصلوں کی باقیات جلانے پر 7لاکھ 35 ہزار جرمانہ کیا گیا 2 مقدمات درج کروائے گئے

انہوں نے مزید کہا کہ فضائی آلودگی کی روک تھام کے لیے جاری مہم کے دوران ابتک 349 بڑے صنعتی یونٹس کو ماحول دوست ٹیکنالوجی پر منتقل کیا جا چکا ہے دھان کی باقیات جلانے سے روکنے کے لیے انفورسمنٹ کے ساتھ ساتھ محکمہ زراعت نے کسانوں کو متبادل ذرائع بروئے کار لانے کی ترغیب دی۔انہوں نے مزید کہا کہ اس ضمن میں 23ہزار 857 نوٹسسز جاری کئے گئے 20 ہزار سے زائد کسانوں میں آگاہی مواد تقسیم کیا گیا۔مساجد میں اعلانات بھی کروائے گئے۔ڈپٹی کمشنر فیاض احمد موہل نے تمام صنعتی یونٹس کے مالکان کو سختی سے تنبیہ کی کہ وہ آلودگی کو کنٹرول کرنے والے ٹریٹمنٹ سسٹم لگوائیں اور ماحول کو صاف بنانے میں ضلعی انتظامیہ کا ساتھ دیں بصورت دیگر انکے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی جس میں جرمانہ،قید اور فیکٹری بندش بھی شامل ہیں۔