وزیر اعلی پنجاب نے فوڈ پانڈا، ٹی سی ایس،بائیکیا کے رائیڈرز کو سیفٹی کٹس تقسیم کیں

Chief Minister Punjab
Chief Minister Punjab

لاہور۔19مارچ (اے پی پی):وزیر اعلی پنجاب مریم نواز شریف نے صوبے میں پہلی مرتبہ رائیڈر سیفٹی کے لئے پنجاب رائیڈر سیفٹی انیشی ا ٹیو مہم کا افتتاح کیا۔ تقریب میں فوڈ پانڈا اور محکمہ محنت و افرادی قوت، حکومت پنجاب کے درمیان ایم او یو پر دستخط کئے۔ڈی جی لیبر ویلفیئر کلثوم حئی اور فوڈ پانڈا کے ڈائریکٹر فرحان خان نے ایم او یو پر دستخط کیے۔حکومت پنجاب کے پورٹل جاب سنٹرز پر فوڈ پانڈا کے لئے آن لائن رجسٹریشن کا آغاز کیا جائے گا۔وزیر اعلی نے فوڈ پانڈا، ٹی سی ایس،بائیکیا کے رائیڈرز کو سیفٹی کٹ تقسیم کیں۔وزیر اعلی نے خوش نصیب رائیڈرز کو الیکٹرک بائیکس دینے کے لئے قرعہ اندازی بھی کی۔

وزیراعلی نے خوش نصیب عابد فضل اور محمد ندیم کو مبارکباد دی اور ای بائیک کی چابیاں دی۔وزیراعلی نے ہر ٹیبل پر جاکر رائیڈرز سے ملاقات کی، تصویر بنوائیں اور آٹو گراف دئیے۔مریم نواز نے نوجوان رائیڈرز کو محنت سے کام کرنے اور بائیک تیز نہ چلانے کی تلقین کی۔خواتین رائیڈرز نے مریم نواز کے ساتھ سلفیاں لیں اور مصافحہ کیا۔وزیراعلی نے کہاکہ لیبر قوانین میں ترمیم لا رہے ہیں، ملازمین کی صحت اور حفاظت کی پروا نہ کرنے والی کمپنی کو جرمانہ ہو گا۔ سخت موسم اور پیچیدہ راستوں سے گزر کر صارفین کو خدمات فراہم کرنے والے رائیڈر قابل تحسین ہیں۔

ڈیوٹی کے دوران رائیڈرز کا تحفظ یقینی بنانا حکومت اور اداروں کی ذمہ داری ہے۔ رائیڈر کمپنیوں کے رائیڈر کمیونٹی کی حفاظت کیلئے اقدامات قابل تحسین ہیں۔ انہوں نے کہاکہ میں جب خواتین رائیڈرز کو سڑکوں پر دیکھتی ہوں تو خوشی بھی ہوتی ہے اور ان کی سلامتی کی فکر بھی لاحق ہوتی ہے۔ میں نے ایک بچی سے پوچھا تو اس نے بتایا 50 ہزار بن جاتے ہیں اور وہ اکیلی کفیل ہے۔رائیڈرز نے جلدی اپنی منزل پر پہنچنا ہوتا ہے، حادثات کا چانس زیادہ ہوتا ہے۔صرف ہیلمٹ کافی نہیں،کہنی او رگھٹنوں پر بھی سیفٹی گارڈ پہننے چاہیے۔

مجھے خوشی ہے کہ رائیڈر محنت کر کے فیملی کیلئے روز گار کما رہے ہیں،چاہتی ہوں حادثات کا شکار نہ ہوں۔ وزیراعلی نے کہاکہ آکوپیشنل سیفٹی حکومت کی ذمہ داری ہے،لیبر اور آکوپیشنل سیفٹی کے قوانین کتابوں میں بند ہیں، لیکن عملدرآمد نہیں۔ لیبر ڈیپارٹمنٹ سیفٹی قوانین پر سختی سے عملدرآمد کروائیں۔ سیمنٹ انڈسٹری میں کام کرنے والے افراد کو پھیپھڑوں کی بیماری ہو جاتی ہے ان کے لئے بھی حفاظتی اقدامات ضروری ہیں۔

سب کمپنیوں کو ہدایت دیں گے بچوں کے سیفٹی گیئر پر توجہ دیں،ملازمین کی حفاظت کمپنی کی ذمہ داری بھی ہے۔ انہوںنے کہاکہ کمپنیاں اپنے ملازمین کی حفاظت کا خیال کریں، حکومت سختی کرے گی تو نا مناسب بات ہو گی۔ ائیڈرز کو اپنا خیال بھی رکھنا ہے، سیفٹی گیئر پہن لیں، زیادہ تیز بائیک نہیں چلانی،جلدی کی کوشش میں خود کو نقصان نہیں پہنچانا۔ طلبہ کو 20ہزار بائیکس دے رہے ہیں،تعداد بڑھائیں گے، ماہانہ قسط 5ہزار سے کم او رڈان پیمنٹ 25ہزار روپے ہیں۔

حسن ارشد ڈائریکٹر فوڈ پانڈا نے کہاکہ مہم کا مقصد ڈیلیوری رائیڈرز کی حفاظت کو یقینی بنانے کیلئے پرسنل پروٹیکٹیو اکوپمنٹ فراہم کرنا ہے۔حفاظتی کٹس میں ہیلمٹ، کہنی اور گھٹنوں کا سیفٹی گارڈ، سموگ کٹس،رین کوٹ سمیت دیگر حفاظتی سامان شامل ہو گا۔ رائیڈرز کو اپنے فرائض محفوظ اور مثر طریقے سے انجام دینے کیلئے حفاظتی کٹس ڈیزائن کی گئی ہیں۔سیکرٹری لیبر پنجاب محمد نعیم غوث، ڈی جی لیبر سیدہ کلثوم حئی نے بھی خطاب کیا۔