وزیر مملکت برائے اطلاعات‘نشریات و قومی ورثہ مریم اورنگزیب کی کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو

پہلے دن وزیر اعظم خود صبح 8 بجے دفتر میں تھے، اب تمام دفاتر صبح 8 بجے کھلیں گے ،مریم اورنگزیب

اسلام آباد ۔ 14 فروری (اے پی پی) وزیر مملکت برائے اطلاعات‘نشریات و قومی ورثہ مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ سینٹ کی سلیکٹ کمیٹی سے اطلاعات تک رسائی بل کی منظوری مسلم لیگ (ن ) کی حکومت کے ایک اور وعدے کی تکمیل ہے‘ اس قانون کے ذریعے پاکستان کی سلامتی اور قومی مفاد کو محفوظ بنایا گیا ہے۔ وہ منگل کو پارلیمنٹ ہاﺅس میں اطلاعات تک رسائی بل کے حوالے سے سینٹ کی سلیکٹ کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہی تھیں ۔وزیر مملکت مریم اورنگزیب نے کہا کہ اطلاعات تک رسائی کے بل کی منظوری وزیراعظم محمد نواز شریف اور مسلم لیگ نون کے انتخابی منشور کے وعدے کی تکمیل ہے ،یہ حکومتی بل ہے جو سینیٹ کی سلیکٹ کمیٹی سے متفقہ طور پر منظور ہوا ہے،بل کی تشکیل میں منتخب نمائندوں ،حکومت ،پارلیمانی کمیٹیاں ،وکلاءاور سول سوسائٹی کا اہم کردار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بل کا مقصد تمام امور میں شفافیت کو یقینی بنانا اور گورنس کی بہتری ہے،اطلاعات تک رسائی کا قانون اور جمہوریت ایک دوسرے کے لئے لازم و ملزوم ہیں،کچھ صوبوں میں اس بل کا اطلاق پہلے سے موجود ہے۔ انہوں نے کہا کہ انفارمیشن کمشن کا انتخاب پارلیمنٹ کرے گی اور یہ کمیشن قانون کے تحت ایک آزاد اور خودمختار ادارہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اطلاعات تک رسائی کے بل سے پاکستان کی قومی سلامتی اور مفادات سے متعلق امور اور ایسے معاملات جن سے عالمی تعلقات متاثر ہوں ان کو تحفظ حاصل ہوگا۔انہوں نے کہا کہ اس بل کے مطابق 16 گریڈ سے اوپر کے افسران و اسٹاف ایف پی ایس سی کے ذریعہ سے تعینات ہونگے