پاکستان رواں سال نومبر میں چوتھے ٹی ٹونٹی ورلڈکپ کرکٹ آف دی بلائنڈ کی میزبانی کرے گا

WORLD BLIND CRICKET LIMITED
WORLD BLIND CRICKET LIMITED

اسلام آباد۔27فروری (اے پی پی):ورلڈ بلائنڈ کرکٹ لمیٹڈ کا 25 واں سالانہ اجلاس منگل کو دبئی میں آئی سی سی بورڈ روم میں منعقد ہوا۔ اجلاس کی صدارت ورلڈ بلائنڈ کرکٹ لمیٹڈکے صدر سید سلطان شاہ نے کی۔ اس موقع پر آسٹریلیا، انگلینڈ، ویسٹ انڈیز، جنوبی افریقہ، پاکستان، بھارت، سری لنکا اور بنگلہ دیش سمیت 8 رکن ممالک کے نمائندے موجود تھے۔ اجلاس میں کئی اہم فیصلے کئے گئے جس کے مطابق پاکستان ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ کرکٹ آف دی بلائنڈ کے چوتھے ایڈیشن کی میزبانی کرے گا جو 20 نومبر 2024 کو شروع ہوگا۔ ٹورنامنٹ کا فائنل 3 دسمبر 2024 کو عالمی یوم معذوری کے موقع پر ہو گا۔

نیوزی لینڈ، جنوبی افریقہ، ویسٹ انڈیز، بھارت، سری لنکا، پاکستان، نیپال، اور بنگلہ دیش سمیت 8 ممالک نے ایونٹ میں اپنی شرکت کی تصدیق کر دی ہے جبکہ آسٹریلیا کی بلائنڈ کرکٹ ٹیم کی شرکت کے حوالے سے تصدیق ہونا ابھی باقی ہے۔ بی ون کھلاڑیوں کے لئے نئی قسم کی بلیک آؤٹ گلاسز کی تیاری کے لئے منظوری دی گئی ہے، پروٹو ٹائپس کو ممبر ممالک کے ساتھ شیئر کیا جائے گا۔ اکتوبر 2022 کے ایم سی سی قوانین میں ترامیم کو شامل کرتے ہوئے ڈبلیو بی سی قوانین میں کئی تبدیلیوں کی منظوری دی گئی۔

یہ قواعد یکم مارچ 2024 سے لاگو ہوں گے۔ میتھیو کینیڈی انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے گلوبل ڈویلپمنٹ منیجر نے بھی اجلاس میں شرکت کی جنہوں نے 2030 تک 30 ملین نئے لوگوں تک رسائی کے لئے اپنے سٹریٹجک پلان میں بلائینڈ کرکٹ کو شامل کرنے کے لئے آئی سی سی کے تناظر اور مستقبل کے منصوبوں کا خاکہ پیش کیا۔ڈبلیو بی سی ٹیکنیکل کمیٹی کو آئی بی ایس اے کے بصارت کے جائزے کے فارم کا موجودہ ڈبلیو بی سی فارم سے موازنہ کرنے اور کوئی ضروری تبدیلیاں یا ترمیم تجویز کرنے کا کام سونپا گیا ہے۔

مزید برآں انہیں آئی بی ایس اے آنکھوں کی بینائی کی جانچ کے طریقہ کار کو اپنانے پر غور کرنا ہے۔ ان کی سفارشات مارچ 2024 کے آخر تک ورلڈ بلائنڈ کرکٹ کی ایگزیکٹو کمیٹی کو پیش کی جانی ہیں۔بھارت کو پہلےٹی ٹونٹی ویمنز ورلڈ کپ کرکٹ آف دی بلائنڈ 2025 کی میزبانی کے حقوق دیئے گئے ہیں ۔سالانہ جنرل میٹنگ میں دنیا بھر میں بلائنڈ کرکٹ کے فروغ کے متعدد امکانات، چیلنجز اور بلائنڈ کرکٹرز کو یکساں مواقع فراہم کرنے کے لئے آگے بڑھنے کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔