کاشتکاروں کو مونگ ماش کی بیماریوں اور کیڑے مکوڑوں کے تدارک کے لیے مناسب حکمت عملی اپنانے کی ہدایت

کاشتکاروں کو مونگ ماش کی بیماریوں اور کیڑے مکوڑو ں کے تدارک کے لیے مناسب حکمت عملی اپنانے کی ہدایت

سیالکوٹ۔ 31 اکتوبر (اے پی پی):اسسٹنٹ ڈائریکٹر پیسٹ وارننگ انیڈ کوالٹی کنٹرول محکمہ زراعت سالکوٹ ڈاکٹر مقصود احمد نے کہا ہے کہ کاشتکار مونگ ماش کی بیماریوں اور کیڑے مکوڑو ں کےتدارک کے لیے مناسب حکمت عملی اپنائیں تاکہ فصل کو نقصان کی معاشی حد سے بچایاجاسکے۔

انہوں نے اے پی پی کوبتایا کہ مونگ ماش کی اچھی پیداوار کے لئے جڑی بوٹیوں کی بروقت تلفی بھی نہایت ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ مونگ ماش کی فصل کو تین پانی درکار ہوتے ہیں لہذا پہلا پانی اگاؤکے 3 سے 4 ہفتے بعددوسرا پانی پھول نکلنے پرتیسرا پانی پھلیاں نکلنے پر دیں ۔

انہوں نے کہا کہ اگر اس دوران بارش ہوجائے تو فصل کی ضرورت کے مطابق اس کی آبپاشی کریں نیز اگر بارش کا زائد پانی کھیت میں جمع ہوجائے تو اس کے نکاس کا بھی فوری انتظام کریں ۔ انہوں نے کاشتکاروں کو مونگ ماش کی بیماریوں اور کیڑے مکوڑوں کے تدارک کے لئے مناسب حکمت عملی اپنانے سمیت ماہرین زراعت یا محکمہ زراعت کے فیلڈ سٹاف کی خدمات سے استفادہ کی بھی ہدایت کی ہے۔