کاشتکار چنے کی بہترپیداوار کے لئے فصل کی دیکھ بھال میں کسی غفلت کا مظاہرہ نہ کریں، محکمہ زراعت

ترجمان آری

سیالکوٹ۔12ستمبر (اے پی پی):ترجمان محکمہ زراعت نے کاشتکاروں کو چنے کی فصل کی بروقت چھدرائی کی ہدایت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کاشتکاروں کو چاہئیے کہ وہ فی ایکڑ بہترپیداوار کے حصول کیلئے فصل کی دیکھ بھال میں کسی غفلت کا مظاہرہ نہ کریں اور فصل اُگنے کے 15 دن کے اندر اندر اس کی چھدرائی کرکے زائد پودوں کو نکال دیں اور پودوں کا قطاروں میں درمیانی فاصلہ15سینٹی میٹریا6انچ کردیں تاکہ پودوں کی بہتر بڑھوتری ممکن ہوسکے۔

انہوں نے ”اے پی پی“کو بتایا کہ اگرفصل اُگنے کے موقع پر زمین میں نمی کم ہو تو چھدرائی کا عمل ذرا تاخیر سے بھی شروع کیاجاسکتاہے کیونکہ ایسی صورت میں فصل پر سوکے کی بیماری حملہ آورہوسکتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ چنے کی فصل کو پانی کی کم ضرورت ہوتی ہے لہذاآبپاش علاقوں میں بارش نہ ہونے کیوجہ صورت میں پھول آنے پر اگرفصل سوکا محسوس کرے تو اسے ہلکاپانی لگایاجاسکتاہے۔

انہوں نے بتایا کہ کاشتکار کاہلی چنے کیلئے پہلاپانی کاشت کے 45دن بعد دوسرا پانی فصل پر پھول آنے پر دیں تاکہ فی ایکڑ بہترپیداوار کا حصول ممکن بنایا جاسکے۔