پاکستان اور سری لنکا کے درمیان پہلا ٹیسٹ میچ 11 سے 15 دسمبر تک پنڈی کرکٹ سٹیڈیم میں کھیلا جائے گا

اسلام آباد ۔ 8 دسمبر (اے پی پی) پاکستان اور سری لنکا کے درمیان پہلا ٹیسٹ میچ 11 سے 15 دسمبر تک پنڈی کرکٹ سٹیڈیم راولپنڈی میں کھیلا جائے گا۔ میچ کی تیاریاں زور شور پر ہیں۔ اس موقع پر سری لنکا کے سابق کپتان بندولا ورنا پورا اور قومی ٹیسٹ کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان جاوید میانداد مہمانان خصوصی ہونگے۔ ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ میں پاکستان اور سری لنکا کے درمیان پہلا میچ مارچ 1982 میں نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں کھیلا گیا۔ میچ میں پاکستان کرکٹ ٹیم کی قیادت جاوید میانداد اور سری لنکا کرکٹ ٹیم کی قیادت بندولا ورناپورا نے کی تھی۔ میچ میں پاکستان نے 204 رنز سے کامیابی حاصل کی تھی۔ میزبان ٹیم نے میچ کی پہلی اننگز میں 396 اوردوسری اننگز میں 4وکٹوں کے نقصان پر 301 رنز بناکر اننگز ڈکلیئر کردی تھی۔ مہمان ٹیم پہلی اننگز میں 344 اور دوسری اننگز میں 149 رنزبناکر آؤٹ ہوگئی تھی۔جاوید میانداد اور بندولا ورنا پورا دونوں ممالک کی ٹیموں کے درمیان 11 دسمبر سے شروع ہونے والے ٹیسٹ میچ سے قبل 10 دسمبر کو سیریز کی ٹرافی کے فوٹو شوٹ میں شرکت کریں گے۔ پنڈی کرکٹ سٹیڈیم میں شیڈول میچ کے پہلے روز کھانے کے وقفے کے دوران دونوں سابق کرکٹرزکی خدمات کے اعتراف میں خصوصی تقریب کا اہتمام کیا جائے گا۔پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی کا کہنا ہے کہ دعوت نامہ قبول کرنے پر وہ دونوں سابق کپتانوں کے مشکور ہیں جو اپنے مصروف شیڈول میں سے وقت نکال کر پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم راولپنڈی آرہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ پاکستان کرکٹ اور اس کے مداحوں کے لئے ایک اچھی خبر ہے۔احسان مانی نے کہا کہ 11دسمبر قومی کرکٹ کی تاریخ میں ایک اہم دن ہے اور وہ جاوید میانداد اور بندولا ورنا پورا کے ساتھ مل کر اس کا جشن منائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ یہ وہ آئیکونز ہیں جن کی کرکٹ کے لئے خدمات کا کوئی ثانی نہیں۔ چیئرمین پی سی بی نے کہاکہ پاکستان کرکٹ بورڈ سابق کرکٹرز کی خدمات کا معترف ہے اور یہ اس کی ایک مثال ہے۔انہوں نے کہا کہ پی سی بی سابق کرکٹرز کی خدمات کااعتراف کرتے ہوئے ایسے اقدامات اٹھاتا رہے گا۔