نیب کو اپنے قیام سے لے کر اب تک 3لاکھ 78ہزار541شکایات موصول ہوئی ہیں،اس عرصہ کے دوران نیب نے نجی وسرکاری اداروں اور شخصیات کے خلاف 12, 935 شکایات کی جانچ پڑتال،8220انکوائریوں اور4021 انویسٹی گیشنز کی منظوری دی‘ 3296 بدعنوانی کے ریفرنس متعلقہ احتساب عدالتوں میں دائر کئے گئے ہیں‘ متعلقہ احتساب عدالتوں میں 1230 بدعنوانی کے ریفرنس زیر سماعت ہیں ، نیب اعلامیہ

اسلام آباد ۔ 20 جولائی (اے پی نیب کو اپنے قیام سے لے کر اب تک 3لاکھ 78ہزار541شکایات موصول ہوئی ہیں،اس عرصہ کے دوران نیب نے نجی وسرکاری اداروں اور شخصیات کے خلاف 12, 935 شکایات کی جانچ پڑتال،8220انکوائریوں اور4021 انویسٹی گیشنز کی منظوری دی جبکہ 3296 بدعنوانی کے ریفرنس متعلقہ احتساب عدالتوں میں دائر کئے گئے ہیں متعلقہ احتساب عدالتوں میں 1230 بدعنوانی کے ریفرنس زیر سماعت ہیں جبکہ نیب کے مقدمات میں سزا کی مجموعی شرح 77فیصد ہے،اس کے علاوہ نیب نے بدعنوان عناصر سے لوٹے گئے 296.850ارب روپے وصول کر کے قومی خزانے میں جمع کرائے ہیں جو کہ نمایاں کامیابی ہے ، نیب اعلامیہ کے مطابق نیب کو 1999میں بدعنوانی کے خاتمہ اور بدعنوان عناصر سے لوٹی گئی رقم وصول کر کے قومی خزانے میں جمع کرانے کیلئے قائم کیا گیا ،نیب کا ہیڈکوارٹرز اسلام آباد جبکہ اس کے علاقائی دفاتر راولپنڈی ،لاہور،کراچی،کوئتہ‘ خیبرپختونخوا،سکھر اور گلگت بلتستان میں ہیں۔پاکستان بدعنوانی کے خاتمہ کی کوششوں کے باعث سارک ممالک کیلئے رول ماڈل کی حیثیت رکھتا ہے،پاکستان سارک اینٹی کرپشن فورم کا پہلا چیئرمین ہے،پاکستان نے نیب کی کوششوں سے یہ کامیابی حاصل کی ہے،چیئرمین نیب کی دانشمندانہ قیادت کے باعث یہ کامیابیاں حاصل ہوئی ہیں۔