اسلام آباد ۔ 17 اکتوبر (اے پی پی) سابق چیئرمین سینیٹ سینیٹر فاروق ایچ نائیک نے کہا ہے کہ موجودہ دور میں امن، ترقی ا ورجمہوریت ایک دوسرے کےلئے لازم و ملزوم ہیں ،پارلیمان عوام اور دیگر شعبوں کے ساتھ موثر رابطوں کے باعث اجتماعی دانش کا مرکزہیں اورامن وامان کے مقامی ، علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر قیام میں اہم کردار ادا کرتے سکتے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بین الاپارلیمانی یونین کی جنرل اسمبلی سے جنیوا میں خطاب کرتے ہوئے کیا جس کا موضوع ”جدت اور ٹیکنالوجی کے دور میں امن اور ترقی کے فروغ میں پارلیمانی قیادت کا کردار “ تھا۔سینیٹر فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ وہ اس اعلیٰ سطحی اجلاس میں پاکستان کے وفد کی سربراہی کر رہے ہیں وفد میں سینیٹر شمیم آفریدی ، سینیٹر آغا شہازیب درانی ، ممبر قومی اسمبلی شیر علی ارباب اور سیکرٹری سینیٹ امجد پرویز ملک شامل ہیں۔ پارلیمان کی قومی سلامتی اور سینیٹ کی پورے ایوان پر مشتمل کمیٹی کا تذکرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دونوں کمیٹیاں امن و ترقی کے حوالے سے مشترکہ لائحہ عمل مرتب کرنے کےلئے ایک تھنک ٹینک کا کردار ادا کر رہی ہیں جس سے نا صرف دوطرفہ بلکہ مختلف ریاستوں کے مابین بہترین تعلقات کے فروغ میں معاونت ملتی ہے ۔