اسلام آباد ۔ 11 فروری (اے پی پی) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے مصنوعی ذہانت سے متعلق اعلیٰ سطحی وزارتی اجلاس میں شرکت کی۔ یہ اجلاس ساتویں سالانہ عالمی حکومتی سربراہ اجلاس کا حصہ تھا جس کا عنوان ”شیپنگ فیوچر گورنمنٹس“ رکھا گیا تھا۔ دبئی سے یہاں موصولہ پیغام کے مطابق یہ اجلاس گلوبل گورننس آف الفورم کے تحت اور متحدہ عرب امارات کے وزیر مملکت برائے مصنوعی ذہانت عمر بن سلطان اولامہ کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ گلوبل فورم کثیر الجہت متعلقہ فریقین کا ایک منفرد پلیٹ فارم ہے جو الگورننس کے ڈھانچہ اور لائحہ عمل بنانے کیلئے دنیا بھر سے صف اول کے ماہرین اور پیشہ ور افراد کو پلیٹ فارم فراہم کرتا ہے۔ اعلیٰ سطحی وزارتی اجلاس میں اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے اعلیٰ سطحی پینل برائے ڈیجیٹل کوآپریشن، او ای سی ڈی کے الایکسپرٹ گروپ (ایلگو)، یونیسکو کے ورکنگ گروپ الایتھکس، آئی ای ای ای کے گلوبل انیشیٹیو، کونسل برائے توسیعی ذہانت (سی ایکس آئی)، سیکنڈ گلوبل گورننس آف راﺅنڈ ٹیبل اور گلوبل ڈیٹا کامن انٹرنیشنل ٹاسک فورس جیسے سات ورکنگ گروپ نے شرکت کی۔ آخر میں سوال و جواب کا سیشن منعقد ہوا۔ یہ فورم سات ورکنگ گروپ سے حاصل کردہ سفارشات کو نافذ العمل بنانے کیلئے تمام ممالک کو ارسال کرے گا تاکہ اس پر عملدرآمد کیلئے اجتماعی ضابطہ کار مرتب کیا جا سکے۔ گلوبل گورننس الفورم سنٹر تین اہم مقاصد کیلئے کام کرتا ہے جن میں ٹیکنالوجی سے متعلق معلومات اکٹھی کرنا، ان کے سماجی و اقتصادی اثرات اور دنیا بھر میں گورننس اور پالیسیوں سے متعلق معلومات جمع کرنا شامل ہے۔ ان معلومات کی بنیاد پر گورننس فریم ورک کے ذریعے پالیسی سازی اور عملدرآمد کی سطح کے رہنما اصول مرتب کئے جاتے ہیں جو متحدہ عرب امارات اور دیگر حکومتوں کے ذریعے گورننس کے عالمی فورم کو پیش کئے جاتے ہیں۔