APP91-11 ISLAMABAD: February 11 - The Hon’ble Chief Justice of Pakistan Mr. Justice Asif Saeed Khan Khosa presiding over meeting of Police Reforms at Supreme Court of Pakistan. APP

اسلام آباد ۔ 11 فروری (اے پی پی) چیف جسٹس آصف سعید خان کھوسہ نے کہا ہے کہ ملک بھر کی پولیس میںشکایات کا نظام فعال ہونے کی بناء پر عوام کو نچلی سطح پر ہی داد رسی ملنے سے عدالتوں پر مقدمہ بازی کا بوجھ کم ہوجائے گا، ان خیالات کا اظہار انہوں نے سوموار کے روز پولیس اصلاحات کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا،انہوںنے تفتیش کے نظام کے سقم اور خامیوں کی نشاندھی کرتے ہوئے تحقیقاتی اداروں پر اپنے تفتیشیوں کی اچھی سے اچھی تربیت کا نظام تشکیل دینے کی بھی ہدایت کی تاکہ نہ صرف مجرموں کی نشاندہی ہو سکے بلکہ وہ اپنے انجام کو بھی پہنچ سکیں اور جھوٹی گواہی کا بھی خاتمہ ہوسکے۔ انہوںنے تفتیشی افسران اور پراسیکیوٹرز کی تربیت کے معیار کو بہتر بنانے کے حوالے سے مختلف تجاویز بھی پیش کیں۔ قبل ازیں ،آئی جی پنجاب نے رپورٹ پیش کی کہ پولیس اصلاحات کے حوالے سے منظور کی گئی سفارشات کی روشنی میں پنجاب میں شکایات کی داد رسی کا نظام تشکیل دے دیا گیا ہے ، جس میں ٹیلی فون ، ای میل ،خطوط اور براہ راست شکایات درج کروائی جا سکتی ہیں، انہوںنے بتایا کہ پنجاب میں روزانہ کی بنیاد پر اوسطاً 163شکایات موصول ہورہی ہیں، انہوںنے مزید بتایا کہ یکم دسمبر2018 سے لیکر 8فروری 2019 تک کل 11436شکایات موصول ہوئی ہیں، جن میں سے 7382نمٹا دی گئی ہیں جبکہ 4054باقی ہیں ، آئی جی سندھ نے رپورٹ پیش کی کہ جنوری تک کل 23542شکایات زیر لتواءتھیں جن میںسے 17313نمٹا دی گئی ہیں جبکہ 6229باقی ہیں‘آئی جی خیبر پختونخواء نے رپورٹ پیش کی کہ جنوری 2019کے دوران کل1573شکایات موصول ہوئی ہیں، جن میں سے 1037نمٹا دی گئی ہیں جبکہ 536باقی ہیں،آئی جی بلوچستان نے رپورٹ پیش کی کہ آج تک کل117شکایات موصول ہوئی ہیں، جن میں سے72نمٹا دی گئی ہیں جبکہ 45باقی ہیں،آئی جی اسلام آباد نے رپورٹ پیش کی کہ یکم نومبر2018سے آج تک کل 3845شکایات موصول ہوئی ہیں جن میں سے3283نمٹا دی ہیں جبکہ 250باقی ہیں،آئی جی گلگت و بلتستان نے رپورٹ پیش کی کہ آج تک کل15شکایات موصول ہوئی ہیں جن میں سے10نمٹا دی ہیںجبکہ 5باقی ہیں۔