APP86-12 KARACHI: February 12 - President Dr. Arif Alvi, Defence Minister and chiefs of armed force witnessing international fleet review during sea phase of multinational exercise AMAN-19. APP

کراچی ۔ 12 فروری (اے پی پی) کثیر القومی میری ٹائم مشقیں ”امن 2019“ اختتام پذیر ہوگئیں۔ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی، وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ ، وزیر دفاع پرویز خٹک ، وزیر دفاعی پیداوار زبیدہ جلال ، چیئرمین جوائنٹ چیفس آفس سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات اور تینوں سروسز چیفس ، سفیروں ، دفاعی اور بحری اتاشیوں اور دیگر نے بحری جہازوں اور بین الاقوامی بحری بیڑوں کا مشاہدہ کیا ۔امن مشق میں 46 ممالک کے مندوبین نے اپنے بحری اثاثوں بشمول بحری جہازوں ،ہیلی کاپٹرز کے ہمراہ امن 2019میں شرکت کی،مشقوں کا عنوان ”امن کے لئے متحد“ تھا ۔ پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی اور نیوی کے دیگر حکام نے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا پاک بحریہ کے بحری جہاز معاون پر آمد پر خیر مقدم کیا ۔مہمان خصوصی نے آپریشنل مشقوں میں بحری جہازوں سے اپنے اہداف کو نشانہ بنانے ،فائرنگ ،جہازوں کے درمیان بحالی کے عمل میں اضافے سمیت دیگر امور کا مشاہدہ کیا ،اس موقع پر پاک بحریہ کے طیاروں اور ہیلی کاپٹروں کے ذریعے شاندار فلائی پاسٹ کیا گیا ۔اس موقع پر سمندر میں بحری جہازوں نے امن کے حوالے سے فارمیشن بنائی جس کا مقصد اتحاد اور ہم آہنگی کا اظہار کرنا تھا ۔صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے پاک بحریہ کے جانب سے میگا ایونٹ کے انعقاد پر مبارکباد دیتے ہوئے خطے میں امن و سلامتی کے لئے پاکستان کے عزم کا اعادہ کیا ۔صدر مملکت نے ہم خیال ممالک کی کثیر تعداد میں امن مشق میں شرکت کو سراہتے ہوئے کہا کہ “امن 19 “مشق تمام سٹیک ہولڈرز کی مشترکہ کاوشوںکے ذریعے خطے کوپر امن اور محفوظ بنانے کی راہ ہموار کریگی۔انہوں نے علاقائی بحری خطرات سے نمٹنے کے لئے سٹریٹجک تعاون کی ضرورت پر زور دیا اور خطے میں تحفظ ،سکیورٹی اور استحکام کی حوصلہ افزائی کی۔امن 19مشقوں کا اختتام دو مراحل میں ہوا ،بندرگاہ مرحلہ 8تا 10فروری جبکہ سمندری مرحلہ 11تا 12فروری کے دوران تھا ۔بندرگاہ مرحلے میں بین الاقوامی میری ٹائم کانفرنس ، میری ٹائم کاﺅنٹر ٹیررزم ڈیمانٹریشن ،کلچرل شو اور فوڈ گالہ پر مشتمل تھا جبکہ سمندری مرحلے میں آپریشنل پلان پر عملی طور پر عمل درآمد اور دیگر سرگرمیوں پر مشتمل تھا ۔ بندرگاہ مرحلے اور بین الاقوامی بیڑے کا جائزہ لینے کے دوران سرگرمیوں کو حتمی شکل دی گئی ۔پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ سے سری لنکا اور زمبابوے کے ہم منصب نے ملاقات کی ۔