اسلام آباد ۔ 11 جولائی (اے پی پی) وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ اقتدار کے بھوکے ریاست، اداروں، افواج پاکستان کے بعد اب وفاق کی علامت سینیٹ آف پاکستان کو ہدف بنا رہے ہیں، موجودہ اپوزیشن ملک میں جمہوریت کو ڈھال بنا کر اداروں کو کمزور کر کے اپنے تابع کرنے کے لئے کوششیں کر رہی ہے ، عوام پوچھ رہے ہیں کہ خود منتخب کئے گئے چیئرمین کو تبدیل کیوں کیا جا رہا ہے، کیا چیئرمین سینیٹ نے آئین، قواعد و ضوابط یا آئینی ذمہ داریوں سے انحراف کیا ہے؟ حکومت کسی فرد یا شخصیت کی بجائے سینیٹ کے تقدس کے لئے ادارے کے ساتھ کھڑی ہو گی، نادان دوستوں کو باور کرانا چاہتے ہیں کہ سینیٹ پر لشکر کشی نہیں ہونے دیں گے، سینیٹ میں بہت سے ایسے ممبران ہیں جو آزاد الیکشن لڑ کر آئے ہیں، وہ پاکستان کے ساتھ کھڑا ہونا پسند کریں گے اور یہی پاکستان کے عوام کی خواہش ہے، آئی ایم ایف کی جانب سے مسلم لیگ (ن) اور پیپلزپارٹی کی بری معاشی کارکردگی کو ذمہ دار قرار دینا عمران خان کے بیانیے پر مہر ثبت کرنا ہے، حقیقی لیڈروں کو ووٹ بینک کی نہیں بلکہ عوام اور ملک کی فکر ہوتی ہے