مظفر آباد ۔ 14 اگست (اے پی پی) وزیراعظم عمران خان نے دوٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے آزاد کشمیر پر حملہ کی صورت میں اینٹ کا جواب پتھر سے دیں گے، پاک فوج اور قوم تیار ہیں، مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کے دوران انسانی المیہ رونما ہونے کی ذمہ داری اقوام متحدہ سمیت عالمی برادری پر عائد ہو گی، بی جے پی اور نریندر مودی کا اصل چہرہ دنیا کے سامنے بے نقاب کیا، نریندر مودی کا مقبوضہ کشمیر میں حالیہ اقدام انتہاءپسندانہ نظریہ کی آخری چال ہے، مقبوضہ کشمیر کی انفرادی حیثیت ختم کرکے نریندر مودی نے بڑی سٹرٹیجک غلطی کی ہے، آر ایس ایس زبردستی مذہب تبدیل کرانے کے ہتھکنڈوں پر عمل پیرا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو یوم آزادی کے موقع پر آزاد کشمیر کی قانون ساز اسمبلی کے خصوصی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کے آزادی کے دن کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہوں، آج کشمیریوں پر انتہائی مشکل وقت ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی اور نریندر مودی کا اصل چہرہ دنیا کے سامنے بے نقاب کیا، ہمیں آر ایس ایس کے خوفناک نظریے کا سامنا ہے، ہندو انتہاءپسند تنظیم نے جرمن نازیوںسے نظریہ کی آبیاری کی، آر ایس ایس مسلمانوں کے خلاف نفرت کے نظریہ پر کاربند ہے اور یہ سمجھتے ہیں کہ انہیں مسلمانوں سے بدلہ لینا ہے کیونکہ مسلمانوں نے کئی سو سال ہندوستان پر حکومت کی ہے، آر ایس ایس کے نظریہ کے پیچھے ہندوستان کا ماضی ہے، یہ سمجھتے ہیں کہ اگر مسلمان ان پر حکومت نہ کرتے تو یہ بہت آگے جا چکے ہوتے۔