اسلام آباد ۔ 12 ستمبر (اے پی پی) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ تعمیرات کے شعبے کے فروغ کے لئے ضروری ہے کہ اسے باقاعدہ صنعت کا درجہ دیا جائے تاکہ شعبے سے منسلک افراد کے لئے آسانیاں پیدا کی جا سکیں، لینڈ کورٹس کے قیام سے اراضی سے متعلقہ مسائل کو جلد حل کرنے میں خاطر خواہ مدد ملے گی۔ انہوں نے یہ بات جمعرات کو تعمیرات کے شعبے میں کاروبار کے لئے آسانیاں پیدا کرنے کے حوالے سے اقدامات کے بارے میں اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان، چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ سید زبیر گیلانی، سیکرٹری ہاؤسنگ ڈاکٹر عمران زیب، چیئرمین نیا پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی لیفٹیننٹ جنرل (ر) انور علی حیدر و دیگر سینئر افسران نے شرکت کی۔ چیئرمین نیا پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی لیفٹیننٹ جنرل (ر) انور علی حیدر نے وزیرِاعظم کو تعمیرات کے شعبے میں حائل مشکلات اور ان کے حل کے لئے اٹھائے جانے والے اقدامات کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ تعمیرات کے حوالے سے تمام اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے پالیسی، قوانین اور قواعد کو آسان بنایا جارہا ہے۔ تعمیرات سے متعلقہ معلومات کی آن لائن فراہمی کے لئے ویب پورٹل کا قیام عمل میں لایا جا رہا ہے، تعمیرات کے لئے مختلف محکموں کی جانب سے مطلوبہ اجازت ناموں کے حصول کے نظام کو سہل بنایا جا رہا ہے اور کوشش کی جا رہی ہے کہ اجازت ناموں اور این او سی کی جگہ رائج قوانین سے مطابقت کے نظام کو رائج کیا جائے۔ انہوں نے بتایا کہ شہری علاقوں میں زوننگ اور تعمیرات کے ذیلی قوانین پر خصوصی توجہ دی جا رہی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ انفارمیشن ٹیکنالوجی کو متعارف کرایا جا رہا ہے تاکہ جہاں پورے نظام میں شفافیت کو یقینی بنایا جاسکے وہاں تمام مراحل کو سہل اور تیز کیا جاسکے اور متعلقہ اداروں میں معلومات کی ترسیل کو آسان بنایا جائے۔