اسلام آباد ۔ 12 نومبر (اے پی پی) وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت عبدالرزاق دائود نے کہا ہے کہ پاکستان چین آزادانہ تجارت کے معاہدہ ایف ٹی اے کے دوسرے مرحلے سے برآمدات کے فروغ میں مدد ملے گی۔ چائنا اکنامک نیٹ کو انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ معاہدہ پر عملدرآمد دسمبرمیں شروع ہوجائے گا۔ گذشتہ مالی سال کے دوران چین کو کی جانے والی برآمدات میں106 ملین ڈالر اضافہ ہوا ہے۔ دوران سال چین کو609.9 ملین ڈالرکی چینی برآمد کی گئی ہے۔ چین کے ساتھ باہمی تجارت کے معاہدہ سے 313 مختلف پاکستانی مصنوعات کی چینی منڈیوں تک آسان رسائی ہوگی۔ پاکستان کی چین کو کی جانے والی برآمدات میں20 گنا تک اضافہ متوقع ہے۔ وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت نے کہا کہ معاہدہ کے دوسرے مرحلہ پر عملدرآمد سے پاکستان کی برآمدات میں دو ارب ڈالر تک اضافہ متوقع ہے۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ مالی سال کے دوران106 ملین ڈالر اضافہ ہوا ہے جبکہ دوران سال چینی کی برآمدات609 ملین ڈ الر سے تجاوز کر گئیں جو مالی سال 2017-18ء کے مقابلہ میں چار گنا تک بڑھی ہے۔انہوں نے کہا کہ زرعی و صنعتی شعبوں سمیت سماجی ترقی کیلئے دیگر مختلف شعبوں میں پاک چین اشتراک کار سے قومی معیشت کی ترقی میں مدد ملے گی جس سے عام آدمی کے معیار زندگی کو بہتر بنایا جاسکے گا۔