اسلام آباد ۔ 12 نومبر (اے پی پی) پنجاب میں52 لاکھ چھوٹے کاشتکاروں کو کھادوں، بیجوں اور دیگر زرعی مداخل کیلئے براہ راست سبسڈی دی جائے گی۔ اس حوالے سے5 ایکڑ تک رقبہ کے مالک کاشتکاروں کی رجسٹریشن کا منصوبہ شروع کیا جارہا ہے تاکہ زرعی مداخل کی قیمتوں میں اضافہ کے باعث چھوٹے کاشتکار طبقہ کے مالی مسائل کو کم کیاجاسکے۔ پنجاب اکنامک ریسرچ انسٹی ٹیوٹ(پی ای آر آئی) نے اس حوالے سے منصوبہ تیارکیا ہے۔ ترقی یافتہ اور ترقی پذیرممالک سمیت مختلف عالمی و قومی اداروں کی ریسرچ رپورٹس کی روشنی میں پی ای آر آئی نے اس حوالے سے جامع حکمت عملی تیارکی ہے جس کے تحت پانچ ایکڑ رقبہ تک کے مالک چھوٹے کاشتکاروں کی رجسٹریشن کی جائے گی۔ رپورٹ کے مطابق صوبہ میں5.2 ملین کاشتکار ایسے ہیں جن کی ملکیت پانچ ایکڑ تک ہے۔ صوبائی حکومت چھوٹے کاشتکاروں کو زرعی مداخل میں براہ راست سہولت پہنچانے کیلئے اقدامات کرے گی جس سے انہیں رعایتی نرخوں پر کھادیں، بیج اور دیگر زرعی مداخل فراہم کئے جائیں گے۔ محکمہ زراعت پنجاب کے حکام نے کہا ہے کہ دو سالہ منصوبہ کے تحت صوبہ میں5.2 ملین کاشتکاروں کی رجسٹریشن کی جائے گی تاکہ سبسڈیز سے براہ راست چھوٹے کسانوں کو سہولت فراہم کی جاسکے جس سے شعبہ کی پیداوارمیں اضافہ اور دیہی معیشت کی ترقی میں مدد ملے گی۔