اسلام آباد/ کراچی ۔ 28 جنوری (اے پی پی) پاکستان میں آسٹریلوی ہائی کمشنر ڈاکٹر جیفری شا نے پاکستان کی ویمن کرکٹ ٹیم کےلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے جنہوں نے آسٹریلیا میں ہونے والے ساتویں آئی سی سی ٹی ٹونٹی ویمن کرکٹ ورلڈ کپ سے قبل منگل کو کراچی میں پاکستانی ویمنز ٹیم سے ملاقات کی۔ اس حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ہائی کمشنر نے کہا کہ پاکستان نیشنل ویمنز کرکٹ ٹیم سے ملنا میرے لئے اعزاز کی بات ہے۔ میری خواہش ہے کہ ٹیم کا آسٹریلیا میں قیام عمدہ رہے۔ پاکستانی کھلاڑیوں کا آسٹریلیا پہنچنے پر پرتپاک استقبال کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ شائقین کو اچھی کرکٹ دیکھنے کو ملے گی۔ ہائی کمشنر شا نے کہا کہ آسٹریلیا میں خواتین کرکٹ کے لئے اس اعتبار سے یہ میگا ایونٹ ہوگا کہ آسٹریلیا وہ پہلا ملک ہو گا جو انعام کی رقم میں صنفی فرق کو ختم کردے گااور خواتین ٹیم کے لئے انعامی رقم مردوں کی ٹیم کے برابر ہو جائے گی ۔ ڈاکٹر شا نے نے پاکستانی شائقین کو بھی ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ دیکھنے کے لئے آسٹریلیا آنے کی دعوت دی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم ورلڈ کپ کا فائنل میلبورن کرکٹ گراو¿نڈ (ایم سی جی) میں کر رہے ہیں ، جو دنیا کا سب سے بڑا کرکٹ اسٹیڈیم ہے، ہماری بھرپور کوشش ہے کہ ہم خواتین کے کھیلوں میں سب سے زیادہ تماشائیوں کا ریکارڈ قائم کریں۔”خواتین کے کھیلوں میں تماشائیوں کا موجودہ ریکارڈ 90175 ہے جو امریکہ میں فیفا ویمنز ورلڈ کپ 1999ءکے فائنل میں قائم کیاگیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا مقصد اس رکارڈ کو توڑنا ہے۔ تقریب میں ٹی 20 ورلڈ کپ کے لئے منتخب ہونے والے کھلاڑی ، پاکستان قومی خواتین ٹیم کی سلیکشن کمیٹی کی چیئر عروج ممتاز ، ٹیم کے کوچز اور پاکستان کرکٹ بورڈ کے سینئر ممبران موجود تھے۔ پاکستانی ٹیم 13 فروروی کو آسٹریلیا روانہ ہوگی اور اپنا پہلا میچ ویسٹ انڈیز کے خلاف 26 فروری کو کینبرا کے مانوکا اوول کرکٹ گراونڈ پر کھیلے گی۔ واضح رہے کہ آئی سی سی ویمنز ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ 2020ء21 فروری سے آسٹریلیا کے 6 شہروں میں کھیلا جائے گا، میگا ایونٹ میں 10 ٹیموں کے درمیان 23 میچز کھیلے جائینگے۔ دس ٹیموں کو دو گروپس میں تقسیم کیا گیا ہے۔