لاہور۔23 جنوری(اے پی پی )ڈی آئی جی آپریشنز لاہور رائے بابر سعید نے پاکستان اور بنگلہ دیش کی کرکٹ ٹیموں کے پریکٹس سیشن کے موقع پر روٹ اور سٹیڈیم پر سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا ۔ انہوں نے قذافی سٹیڈیم دورہ کے موقع پر سکیورٹی پر تعینات پولیس افسران اور اہلکاروں کو ضروری ہدایات دیں۔ رائے بابر سعید نے کہا کہ پاکستان اور بنگلہ دیش کرکٹ ٹیموں کے درمیان ہونے والے تمام میچز کیلئے سکیورٹی کے بہترین انتظامات کئے گئے ہیں، سکیورٹی ہائی الرٹ ہے۔انہوںنے کہا کہ پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ کی بحالی میں لاہور پولیس بھرپور کردار ادا کررہی ہے ۔لاہور پولیس ٹیموں اور شائقین کو بھرپور سکیورٹی فراہم کرنے کے لئے مکمل طور پرتیار اور تمام متعلقہ اداروں سے مکمل رابطہ میں ہے۔ بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم کے قذافی سٹیڈیم میں پریکٹس سیشن کے دوران بھی لاہور پولیس کی طرف سے سکیورٹی کے بہترین انتظامات دیکھنے میں آئے۔ ٹیموں کو مضبوط سکیورٹی حصار میں ان کی قیام گاہ سے سٹیڈیم تک پہنچایا گیا۔ڈی آئی جی آپریشنز نے کہا کہ کرکٹ میچز کے انعقاد کے سابقہ تجربات کی بنیادپر سکیورٹی اور پارکنگ کے بھرپورانتظامات عمل میںلائے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ٹیموںکی قیام گاہ سے سٹیڈیم تک نقل و حرکت کے دوران ٹریفک کی روانی انتہائی محدود وقت کیلئے بند کی جائے گی تاکہ شہریوں کو کم سے کم دشواری کا سامنا ہو۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے ساتھ ایک نئی ایس او پیز کے تحت کم سے کم وقت کیلئے ٹریفک کو روکا جائے گا۔ رائے بابر سعید نے کہا کہ تمام اداروں اور سکیورٹی ایجنسیز کے مشترکہ تعاون سے سکیورٹی انتظامات کئے گئے ہیں۔ لاہور پولیس کو رینجرز اور پاکستان آرمی کی بھی بھرپور معاونت حاصل ہے۔انہوںنے کہا کہ زمینی سکیورٹی کے علاوہ فضائی نگرانی یقینی بنانے کیلئے ہیلی کاپٹرز کی مدد دستیاب ہوگی۔ دونوں ٹیموں کو نقل و حرکت کے دوران زیرو روٹ کی سہولت فراہم کی جائے گی۔ 24،25اور 27جنوری کو کھیلے جانے والے ٹی ٹونٹی میچز کے دوران لاہور پولیس کی جانب سے مربوط سکیورٹی پلان مرتب کیا گیا ہے۔مجموعی طور پر10ہزار سے زائد پولیس افسران و اہلکار ڈیوٹی پر مامور ہونگے۔ 17ایس پیز ،48ڈی ایس پیز ، 134انسپکٹرزاور 592اپر سب آرڈینیٹس فرائض سر انجام دیں گے۔ رائے بابر سعید نے کہا کہ ٹیموں کی قیام گاہ اورسٹیڈیم کے گردو نواح میں سرچ اینڈ سویپ آپریشنز جاری ہیں ۔ڈولفن سکواڈ اورپولیس رسپانس یونٹس کی ٹیمیںکی مسلسل پٹرولنگ کو یقینی بنایا جارہا ہے ۔ٹیموں کی قیام گاہ، سٹیڈیم اور روٹس کی بلند عمارتوں پر سنائپرزبھی تعینات ہیں۔انہوں نے کہا کہ سی سی ٹی وی کیمروں کی مدد سے ٹیموں اور سٹیڈیم کے اطراف ہونے والی نقل و حرکت کو مسلسل مانیٹر کیا جارہا ہے۔شائقین کرکٹ کو تین درجاتی سکیورٹی حصار سے گزر کر ہی سٹیڈیم میں جانے کی اجازت ہو گی۔چیکنگ کے لئے میٹل ڈیٹکٹر اور واک تھرو گیٹس کے استعمال کو بھی یقینی بنایا جائے گا۔میچ کے دوران شائقین کو سٹیڈیم میں ممنوعہ اشیاء لانے کی اجازت نہیں ہو گی۔رائے بابر سعید نے کہا کہ شائقین کرکٹ کے لمحات سے بھرپور لطف اندوز ہونے کے لئے لاہور پولیس سے تعاون کریں اور پولیس کی جانب سے کی جاری کردہ ہدایات پر عمل کریں ۔