اسلام آباد ۔ 25 فروری (اے پی پی) وزیراعظم عمران خان نے غیر ملکی سرمایہ کاروں کو پاکستان میں مستقبل کی سرمایہ کاری کیلئے مکمل تعاون اور سہولیات فراہم کرنے کا یقین دلاتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کاروبار اور طویل المدتی سرمایہ کاری کیلئے ایک پرکشش منزل بن چکا ہے جس کی پذیرائی عالمی سرمایہ کار کمیونٹی کر رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سٹرٹیجسٹ ایف آئی ایم پارٹنرز کے سربراہ میتھیو ووگی کی قیادت میں غیر ملکی سرمایہ کاروں کے ایک وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا جس نے منگل کو یہاں ان سے وزیراعظم آفس میں ملاقات کی۔ غیر ملکی سرمایہ کاروں نے موجودہ حکومت کی سرمایہ کار دوست پالیسیوں کی تعریف کی جس کے باعث پاکستانی معیشت کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کیلئے غیر ملکی سرمایہ کاروں کے اعتماد میں اضافہ ہوا ہے۔ وفد کے اراکین نے پاکستان میں طویل مدت سرمایہ کاری میں گہری دلچسپی کا اظہار کیا اور کہا کہ پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاروں کو اپنی سرمایہ کاری پر بڑے منافع کی توقع ہے۔ انہوں نے ڈیجیٹل پاکستان کے وزیراعظم کے وژن کی تعریف کی اور کہا کہ وزیراعظم کی قیادت کے تحت پاکستان ترقی کی راہ پر گامزن ہو گیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ گذشتہ سال معیشت کے استحکام کے لحاظ سے بڑا قابل چیلنج تھا، استحکام حاصل کرنے کے بعد اب ہماری توجہ سماجی اقتصادی ترقی پر ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ عالمی بینک کی حالیہ بزنس رپورٹ میں پاکستان کو 28واں درجہ حاصل ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان مختلف شعبوں کیلئے مثالی مواقع فراہم کرتا ہے جہاں باصلاحیت نوجوانوں کے ساتھ ترقی کے لامحدود مواقع ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت روزگار پیدا کرنے کی سکلز پر توجہ دے رہی ہے جس سے غربت کے خاتمہ میں مدد ملے گی۔ انہوں نے معاشرہ کے پسماندہ طبقات کیلئے احساس پروگرام کی اہمیت سے آگاہ کیا۔ اس موقع پر مشیر تجارت عبدالرزاق داﺅد، مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ اور سٹیٹ بینک کے گورنر سیّد رضا باقر بھی موجود تھے۔