پاکستان ایک امن پسند ملک ہے اورایٹمی ریاست کی حیثیت سے صبر وتحمل اور ذمہ داری کی ہماری پہچان جاری رہے گی،پاکستان خطے میں کسی بھی ایٹمی یا روایتی ہتھیاروں کی دوڑ کے خلاف ہے، وزیر خارجہ شا محمودقریشی کایہاں یوم تکبیر کے موقع پر ورچوئل سیمینار سے خطاب

اسلام آباد ۔ 28 مئی (اے پی پی) وزیر خارجہ شا محمودقریشی نے کہا ہے کہ پاکستان ایک امن پسند ملک ہے اورایٹمی ریاست کی حیثیت سے صبر وتحمل اور ذمہ داری کی ہماری پہچان جاری رہے گی۔جمعرات کو یہاں یوم تکبیر کے موقع پر ورچوئل سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان خطے میں کسی بھی ایٹمی یا روایتی ہتھیاروں کی دوڑ کے خلاف ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے سٹریٹجک اعتبار سے ذمہ دارانہ رویئے پر مبنی تجاویز پر عملدرآمد کے ذریعے امن واستحکام کیلئے اپنے عزم کا بھر پور مظاہرہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امن کی خواہش کیلئے ہماری خواہش سے کسی کو غلط فہمی کا شکار نہیں ہونا چاہیئے،پاکستان کسی بھی جارحیت کیخلاف موثر دفاع کی بھر پور صلاحیت رکھتا ہے۔انہوں نے کہا کہ آج ہم کووڈ19وبائی امراض چیلنجوں کے تناظر میں یوم تکبیر منا رہے ہیں، جس نے جغرافیائی سرحدوں، نسلی، سیاسی اور مذہبی تقسیم کے بغیر عالمی برادری کو خطرات سے دوچار کر دیا ہے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ حال ہی میں بھارت کی جانب سے ایل او سی پر کشیدگی میں اضافے، بلا اشتعال جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کا مقصدقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے عالمی توجہ ہٹانا ہے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ بی جے پی حکومت کی پانچ اگست 2019 کے غیر قانونی اور یکطرفہ اقدامات کا مقصد مقبوضہ کشمیر کی عالمی تسلیم شدہ حیثیت کو متنازعہ بنانے اور آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی کوشش تھی۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی اقدامات نے جنوبی ایشیاء امن واستحکام کو مزید خطرات سے دو چار کر دیا ہے۔