اقوام متحدہ کے قیام کو 75 سال مکمل

اقوام متحدہ ۔ 27 جون (اے پی پی) اقوام متحدہ کے قیام کو پچہتر سال پورے ہوگئے ہیں ، آج کی دنیا پر نگاہ ڈالیں تو وہ اس وقت کے مقابلے میں جب عالمی ادارے کا قیام عمل میں آیا تھا، اب کتنی بدل چکی ہے۔ امریکی نشریات اداے کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریش اس جانب توجہ دلاتے ہیں کہ ایسے میں جب عالمی ادارہ اپنی پچہترویں سالگرہ منا رہا ہے پورا کرہ ارض شورش اور مختلف النوع مسائل سے دوچار ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس سے لے کر ماحولیات کا مسئلہ ہو یا نسلی انصاف یا بڑھتی ہوئی عدم مساوات کا معاملہ ہو، ہماری آج کی دنیا میں ایک انتشار کی کیفیت ہے، ہمارے لیے مشترکہ چیلنج یہ ہے کہ حالات کا مقابلہ کرنے کے لیے ہم سنجیدہ اقدامات کریں۔ماہرین کا کہنا ہے کہ موسمیاتی تبدیلی کا مسئلہ اور عالمی صحت جیسے معاملات جو آج ہمیں درپیش ہیں وہ صرف بین الاقوامی تعاون سے ہی حل کیے جا سکتے ہیں۔ اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل اس بات کا اعتراف کرتے ہیں کہ آج کی دنیا میں کثیر جہتی کے اصول کا مزید پختہ ہونا وقت کی ضرورت ہے۔ اس وقت عالمی ادارہ 83 ملکوں میں 8 کروڑ 70 لاکھ لوگوں کو خوراک مہیا کر رہا ہے جبکہ دنیا میں بچوں کی نصف آبادی کو ٹیکے لگانے کی سہولت مہیا کی جا رہی ہے اور 13 ملکوں میں تقریبا ایک لاکھ امن فوج متعین کی گئی ہے۔