پاکستان2030ءتک 30فیصد شفاف توانائی متبادل ذرائع سے پیدا کرے گا ،جی ای رینوایبل انرجی سروس

اسلام آباد ۔ 27 جون (اے پی پی) پاکستان2030ءتک 30فیصد شفاف توانائی متبادل ذرائع سے پیدا کرے گا جس میں ہوا، سورج، بائیوماس اور چھوٹے آبی ڈیمز سے پیدا ہونے والی بجلی شامل ہوگی۔ جی ای رینیوایبل انرجی سروس کے منیجر فواد حق نے کہا ہے کہ متبادل ذرائع سے پیدا ہونے والی بجلی بڑے ہائیڈرو الیکٹرک پاور پراجیکٹس سے پیدا ہونے والی 27 فیصد بجلی کے علاوہ ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان میں ہوا کی مدد سے بجلی پیدا کرنے کےلئے لگائی گئی ونڈ ٹربائینز کی استعداد1235 میگاواٹ ہے، 9 مختلف پلانٹس پر جی ای رینو ایبل انرجی ونڈ ٹربائینز کی تعداد271 ہے جو مجموعی پیداواری استعداد کے 36فیصد سے زیادہ بجلی پیدا کررہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ متبادل توانائی ہی مستقبل ہے۔ انہوں نے کہا کہ جی ای کی زیادہ تر ٹربائینز سخت گرمی والے علاقوں میں کام کررہی ہیں جہاں پر جون کے آغاز میں درجہ حرارت40 ڈگری سینٹی گریڈ سے زیادہ ہوتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں متبادل ذرائع سے بجلی پیدا کرنے کی وسیع استعداد موجود ہے جس میں بتدریج اضافہ ہورہا ہے۔