برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر کی وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز سے ملاقات

اسلام آباد ۔ 6 جولائی (اے پی پی)برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر نے کہاہے کہ پاکستان جس انداز سے کورونا کے چیلنج سے نبرد آزما ہوا وہ درحقیقت قابل تعریف اور رول ماڈل ہے۔موثر ابلا غ اور احتیاط کورونا وباءکے خلاف جنگ میں موثر ہتھیار ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات نے کہا کہ پاکستان میں ہم پہلے دن سے سے عوام کو کورونا سے محفوظ رکھنے اور معاشی مشکلات سے بچانے کی متوازن حکمت عملی پر کاربند ہیں۔ ملک میں کورونا وباءکے چیلنج سے نمٹنے کے لئے سمارٹ لاک ڈاو¿ن کی حکمت عملی کارگر ثابت ہورہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے موثر کمیونیکیشن حکمت عملی، عوام تک مستقل پیغام رسانی اورلوگوں کو کورونا کی بدلتی ہوئی صورتحال سے نمٹنے کے لئے ساتھ رکھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ این سی او سی کورونا کے خلاف قومی کاوشوں کو مربوط بنانے کا مرکز ہے یہاں تصدیق شدہ اعدادوشمار اور معلومات کی بناءپر کئے گئے فیصلوں پر عملدرآمد یقینی بنایا جاتا ہے۔ جہاں تک معلومات کی فراہمی کا تعلق ہے تو وزرارت اطلاعات ونشریات این سی اوسی کے ساتھ قریبی تعاون سے کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عیدالاضحی پر ایس او پیز پر عمل کیا جائے گا۔ مذبحہ خانوں میں قربانی کے جانوروں کو ذبح کیا جائے گا۔ اسی طرح مضافاتی علاقوں میں قربانی کے جانوروں کی فروخت کے انتظامات کیے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان برطانیہ کے ساتھ اپنے تعلقات کو انتہائی قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان مختلف علاقائی و بین الاقوامی معاملات پر ہم آہنگی پائی جاتی ہے۔ انہوں نے برطانیہ میں کورونا وبا کے باعث اموات پر دلی تعزیت کا اظہار کیا۔انہوں نے کہاکہ پاکستان کی حکومت اور عوام آزمائش کی اس گھڑی میں برطانیہ کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہیں۔ سینٹر شبلی فراز نے کہا کہ کورونا وبا کا مقابلہ کرنے کی برطانوی کاوشوں اور عوام کے عزم و ہمت کو سراہتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ کورونا کو شکست دینے کیلئے مل کر کاوشیں کرنا ہوں گی۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے برطانوی سفیر نے کہا کہ پاکستان اور برطانیہ دونوں دوست ہیں اور ہم کورونا وباءکے چیلنج سے نمٹنے کیلئے مل کر کھڑے ہیں۔ وزیر اطلاعات نے برطانوی ہائی کمشنر کی نیک خواہشات کو سراہا اور کہا کہ اس وباءکے خلاف جنگ میں ہماری مدد کرنے کے لئے آپ کے تعاون کی قدر کرتے ہیں۔ ملاقات کے دوران وزارت اطلاعات و نشریات کے اعلی حکام بھی موجود تھے۔