حکومت پولیس اصلاحات متعارف کروانے اور عصمت دری کرنے والوں کے لئے سخت سزا دینے کے لئے فوجداری نظام کو مزید موثر بنانے کے لئے کوشاں ہے، سینیٹر فیصل جاوید

اسلام آباد ۔ 16 ستمبر (اے پی پی) پاکستان تحریک انصاف کے سینیٹر فیصل جاوید نے کہا ہے کہ حکومت پولیس اصلاحات متعارف کروانے اور عصمت دری کرنے والوں کے لئے سخت سزا دینے کے لئے فوجداری نظام کو مزید موثر بنانے کے لئے کوشاں ہے۔بدھ کو نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر فیصل جاوید نے کہا کہ حکومت جامع بل پر کام کر رہی ہے اور اسے قومی اسمبلی میں پیش کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اس بل کو منظور کرے گی اور حزب اختلاف کو اس کی حمایت کرنی چاہئے۔ سینیٹر فیصل جاوید نے کہا کہ ہمیں تباہ حال انصاف کے نظام میں اس طرح اصلاحات کی ضرورت ہے کہ کم سے کم وقت میں سزا دی جائے اورمتاثرہ فریق اور مجرموں کے مابین کوئی مفاہمت نہ ہو۔سینیٹر فیصل جاوید نے کہا کہ حکومت ملک میں جنسی زیادتیوں کو روکنے کے لئے سخت سے سخت سزایں متعارف کرائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم سزا کو سخت کرنے اور مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچانے کے لئے قانون سازی میں بہتری لائیں گے اور عصمت دری کے لوگوں کو پھانسی دینے کے لئے اتفاق رائے کی ضرورت ہے۔ سینیٹر فیصل جاوید نے کہا کہ جرائم پیشہ افراد کی حمایت کرنے والوں کو بھی مثالی سزا دی جانی چاہئے، ہمیں ان خواتین اور بچوں کے لئے انصاف کو یقینی بنانا ہے جن کے ساتھ زیادتی ہوئی ہے۔سینیٹر فیصل جاوید نے امید ظاہر کی کہ حکومت ترامیم تیار کررہی ہے اورپوری قوم ہمارا ساتھ دے گی۔ انہوں نے کہا کہ بہت سے واقعات کی اطلاع نہیں ملتی ہے لیکن ہمیں یہ یقینی بنانا ہوگا کہ عصمت دری کے جرم میں ملوث بچوں اور خواتین کو فوری انصاف فراہم کیا جائے۔ انہوں نے کڑی تنقید کی کہ پنجاب میں مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے پولیس محکمہ کو ہمیشہ اپنے ذاتی مفادات کے لئے استعمال کیا اور تھانہ نظام کو برباد کردیا۔