بھارت کے توسیع پسندانہ عزائم سے خطے کو خطرات لاحق ہیں، عالمی امن کیلئے پاکستان کی قربانیاں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ، معید یوسف

لاہور۔17اکتوبر (اے پی پی):وزیراعظم کے مشیر برائے قومی سلامتی معید یوسف نے کہاہے کہ بھارت کے توسیع پسندانہ عزائم سے خطے کو خطرات لاحق ہیں، عالمی امن کیلئے پاکستان کی قربانیاں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں‘ مقبوضہ کشمیر میں بھارت انسانوں سے جانوروں والاسلوک کررہا ہے ہمیں پتہ ہے کہ کشمیر میں کیا حالات ہیں۔ پاکستان کی سیاسی اور عسکری قیادت ایک پیج پر ہے، پاکستان خطے میں امن اور خوشحالی کیلئے کوشاں ہے، پاکستان افغانستان میں بھی امن کا خواہاں ہے، خطے میں امن، ہمسایوں کے ساتھ اچھے تعلقات ترجیح ہے، اقتصادی راہداری خطے کی ترقی کا منصوبہ ہے۔وہ ہفتہ کے روز لاہور پریس کلب میں میٹ دی پریس میں اظہار خیال کر رہے تھے۔ معید یوسف نے کہا کہ بھارت کے توسیع پسندانہ عزائم سے خطے کے امن کو خطرات لاحق ہیں اور اس کے منفی عزائم سے اس کے تمام ہمسایوں کو خطرہ ہے، بھارت نے خطے میں افرا تفری پھیلا رکھی ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں بھارت کی دہشتگردی سے دنیا کو آگاہ کر رہے ہیں، پاکستان میں بھارتی دہشتگردی کے ثبوت ایک ایک کرکے گنوائے ہیں، پاکستان خطے میں امن و خوشحالی کیلئے کوشاں ہیں اور عالمی امن کیلئے پاکستان کی قربانیاں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہیں۔مشیر قومی سلامتی نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارت انسانوں سے جانوروں والاسلوک کررہا ہے، ہمیں پتہ ہے کہ اس وقت کشمیر میں کیا حالات ہیں، مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں اور کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق حل ہونا چاہیے۔معید یوسف نے مزید کہا کہ پاکستان کا ہدف خطے میں امن کا قیام ہے اور اقتصادی راہداری خطے کی ترقی کا منصوبہ ہے، پاکستان کا بیانیہ اکنامک سکیورٹی ہے۔انہوں نے کہا کہ میڈیا پاکستان کی سفارتکاری کا حصہ ہے کیونکہ 90 فیصد خبریں پاکستان کے لوکل میڈیا سے اٹھا کر لگائی جاتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ عالمی امن کیلئے پاکستان کی قربانیاں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں، مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کو اجاگر کر رہے ہیں، وزیراعظم نے کہا تھا بھارت ایک قدم بڑھائے گا تو ہم 2 بڑھائیں گے، مودی کسی اور سمت کی طرف قدم بڑھا رہا ہے۔ انہوں نے کہا پاکستان میں بھارتی دہشتگردی کے ثبوت ایک ایک کر کے گنوائے، بھارت نے دنیا بھر میں پاکستان کی ساکھ کو متاثر کیا، مسئلہ کشمیر یو این قراردادوں کے مطابق حل ہونا چاہیئے۔انہوں نے کہا کہ فاروق عبداللہ نے کہاتھا چین کو ہم پر مسلط کریں لیکن بھارت کو نہیں ، مسئلہ کشمیر یو این قراردادوں اور کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق حل ہونا چاہیے۔معید یوسف نے کہا کہ پاکستان خطے میں امن اور خوشحالی کے لیے کوشاں ہے، اور عالمی امن کےلئے پاکستان کی قربانیاں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہیں ، دنیا میں پاکستان امن کاپیغام دیتا ہے اور اس کے لیے کام ہورہا ہے، اقتصادی راہداری خطے کی ترقی کا منصوبہ ہے ، جس میں چین ہمارا شراکت دار بنا ہے تو اگر امریکہ بھی چاہے تو پاکستان میں سرمایہ کاری کرے۔