کورونا وائرس کسی سیاسی جماعت کا نہیں قومی مسئلہ ہے، ہرایک کو ذمہ دارانہ کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے،کورونا کی شدت میں اضافہ ہو رہا ہے،وفاقی وزیر سینیٹر شبلی فراز

اسلام آباد۔21نومبر (اے پی پی):وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کسی سیاسی جماعت کا نہیں قومی مسئلہ ہے، ملک سے مہلک وبا کے خاتمے کیلئے ہر ایک کو حصہ ڈالنا ہو گا، اپوزیشن جماعتیں جان بوجھ کر لوگوں کی زندگیوں کو خطرے میں ڈال رہی ہیں، اپوزیشن کے قائدین کے خلاف قانونی کارروائی ہونی چاہیے، پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) سیاسی حکومت ہے اور طویل جدوجہد کے بعد اقتدار میں آئی ہے، اپوزیشن کا مقابلہ سیاسی طریقے سے کیا جائے گا۔ ہفتہ کو نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت جلسوں سے خوفزدہ نہیں، پہلے بھی اپوزیشن جماعتوں کو تین شہروں میں جلسے کرنے دیئے کوئی فرق نہیں پڑا لیکن اب کورونا کی صورتحال میں شدت آ رہی ہے اسلئے جلسے نہیں ہونے چاہییں۔ شبلی فراز نے کہا کہ لوگوں کی صحت اور روزگار کا تحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے، حکومت عوام کی جانوں کو خطرے میں نہیں ڈالنا چاہتی اسلئے 21 نومبر کو رشکئی میں جلسہ ملتوی کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ جلسوں میں کورونا کے پھیلائو کا خدشہ ہے، اپوزیشن جماعتوں کی عقل پر پردے اور بصارت میں جالے پڑ چکے ہیں، ان لوگوں نے مائنڈ سیٹ بنا لیا ہے کہ حکومت گرانے کیلئے لوگوں کی جانیں جاتی ہیں تو جائیں، اپوزیشن غیرذمہ دارانہ اور منافقانہ رویہ ترک کر دے۔ وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں عوام کے ساتھ مخلص نہیں ہیں، یہ لوگ صرف ذاتی مفادات کیلئے جلسے جلسوں کا ڈرامہ رچا رہے ہیں، اپنی فیملیز کو جلسوں میں نہیں لے کر جاتے، صرف غریب عوام کی زندگیوں کے ساتھ کھیلتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے کورونا وائرس کی پہلی لہر کے دوران موثرحکمت عملی اختیار کی تھی جو کامیاب رہی، اب بھی کوشش ہے کہ متوازن ماحول کے ساتھ آگے بڑھا جائے تاکہ لوگوں کی صحت اور روزگار متاثر نہ ہو، وفاقی حکومت این سی او سی پلیٹ فارم کے ذریعے تمام صوبائی حکومتوں کو ساتھ لیکر چل رہی ہے لیکن بدقسمتی سے یہ لوگ باہر نکل کر سیاست کرنا شروع کر دیتے ہیں، اپوزیشن جماعتوں اور عوام سے اپیل ہے کہ وہ کورونا ایس او پیز پر عمل درآمد کریں اور ماسک پہنیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام اور سیاسی مسائل کے حل کیلئے پارلیمنٹ بہترین فورم ہے، بدقسمتی سے اپوزیشن نے غیرجمہوری رویے سے اسے اکھاڑہ بنایا ہوا ہے، اپوزیشن جماعتیں عوام اور قومی مفادات میں قانون سازی میں حکومت کا ساتھ دیں۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وبا ختم ہونے کے بعد اپوزیشن جلسوں کا شوق پورا کرے۔