نائیجیریا میں 10 لاکھ بچے عدم تحفظ کے باعث سکول نہیں جا سکیں گے، یونیسیف

نیویارک۔16ستمبر (اے پی پی):اقوام متحدہ کے ادارہ برائے اطفال یونیسیف نے کہا ہے کہ نائیجیریا میں رواں سال بڑے پیمانے پر طلبہ کے اغواا ورحملوں کے بعد تشدد کے خطرات کے باعث 10 لاکھ بچے سکول نہیں جا سکیں گے ۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق نائیجیریا کے شمال مغربی اور وسطی ریاستوں میں دسمبر سے اب تک ایک ہزار سے زائدطلبہ کو تاوان کے لیے اغوا کیا گیا جبکہ درجنوں ابھی بھی اغواکاروں کی قید میں ہیں۔

یونیسیف نے کہا ہے کہ رواں سال نائیجیریا کے 20سکولوں پر حملے کیے گئے جن میں سے 1400 سے زائد طلبہ کو اغوا کیا گیا جبکہ 16 جاں بحق ہو گئے، انہوں نے کہا کہ بیشتر کو تاوان کے بعد رہا کر دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ اغوا کے واقعات کے بعد بہت سےخاندان اپنے بچوں کو سکول بھیجنے سے گھبرا رہے ہیں ، انہوں نے کہا کہ 37 لاکھ سے زائد بچے اپنے نئے تعلیمی سال کا آغاز کریں گے ایک اندازے کے مطابق جن میں سے تقریبا 10 لاکھ بچے سکول نہیں جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ کچھ ریاستی حکومتوں نے اغوا کے بعد سکولوں کو عارضی طور پر بند کر دیا ہے۔