پی ٹی آئی کی حکومت عوام کے پیسے کی پاسبان ہے جوپوری دیانتداری، ایمانداری اور صاف شفاف انداز سے اس کو عوامی فلاح و بہبود کے منصوبوں پر خرچ کرے گی، فرخ حبیب

فیصل آباد۔18ستمبر (اے پی پی):وزیر مملکت برائے اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت عوام کے پیسے کی پاسبان ہے اور وہ پوری دیانتداری، ایمانداری اور صاف شفاف انداز سے اس کو عوامی فلاح و بہبود کے منصوبوں پر خرچ کرے گی۔ہفتہ کے روز نیو ناظم آباد فیصل آباد میں ایک پارک کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس حلقے کے عوام نے انہیں بڑی محبت دی اور اب وہ انہیں ان کے گھر کی دہلیز پر بہترین سہولیات کی فراہمی یقینی بنارہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حلقے کے تمام پارکوں کی بحالی کردی گئی ہے جبکہ پسماندہ اور نظر انداز کئے گئے علاقوں میں نئے پارکس تعمیر کئے جارہے ہیں تاکہ وہاں کے نوجوان نشے اور جوئے سمیت دیگر منفی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کی بجائے صحت مند سرگرمیاں اپنائیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کے دس ارب سونامی درخت لگانے کے ویژن کو عالمی برادری نے بہت سراہا ہے اور اس کے نتیجے میں پاکستان کو اس سال اقوام متحدہ کے عالمی یوم ماحولیات کی تقریب کی میزبانی کا شرف بخشا گیا۔

انہوں نے کہا کہ اب پاکستان کو صاف ستھرا اور سرسبز و شاداب بنانا نہ صرف ہماری قومی بلکہ بین الاقوامی ذمہ داری ہے لہٰذا اس سلسلہ میں پورے ملک کے اندر زیادہ سے زیادہ درخت لگائے جارہے ہیں۔ انہوں نے نیو ناظم آباد کی رابطہ سڑک کی جلد تعمیر نو کا یقین دلایا اور کہا کہ اس منصوبے سے یہاں کے مکینوں کو مواصلات کی بہترین سہولت فراہم ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ حالیہ بارشوں میں اس علاقے کی سیور لائن نے اوور فلو کرنا شروع کردیا تھا جس کے باعث یہاں کے رہائشیوں کو بڑی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا لہٰذا واسا کو ہدایت کی گئی کہ وہ رحمانیہ روڈ کیلئے ایک نئی سیوریج سکیم تیار کرے تاکہ نیو ناظم آباد، پریمیئر کالونی اور رحمانیہ ٹاؤن کے رہائشیوں کے سیوریج کے مسائل مستقل اور پائیدار بنیادوں پر حل ہوسکیں۔

انہوں نے کہا کہ اس سال کے آخر تک پنجاب کے ہر گھرانے کو صحت کارڈ فراہم کر دیئے جائیں گے جس سے کارڈ رکھنے والے افراد اپنی پسند کے ڈاکٹر یا ہسپتال سے 10لاکھ روپے تک سالانہ مفت طبی سہولیات حاصل کرسکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے اپنے حلقہ کے لوگوں کیلئے پینے کا صاف پانی مہیا کرنے کا ایک ترجیحی منصوبہ بنایا ہے جس کے تحت حلقے میں مختلف مقامات پر واٹر فلٹریشن پلانٹس لگائے جارہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پہلے مرحلے میں بے کار اور خراب واٹر فلٹریشن پلانٹس کو فعال بنایا گیا جبکہ اب پندرہ نئے پلانٹس بھی لگائے جارہے ہیں۔ انہو ں نے کہا کہ ان کا ارادہ ہے کہ ان کے حلقہ کی ہر یونین کونسل میں کم از کم ایک واٹر فلٹریشن پلانٹ ضرور لگایا جائے جبکہ بڑی یونین کونسلوں میں ان کی مقامی ضرورت کے مطابق دو، تین یا چار واٹر فلٹریشن پلانٹس بھی لگائے جاسکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ رواں سال کے ترقیاتی بجٹ میں سے کم از کم 30واٹر فلٹریشن پلانٹس لگائے جائیں گے تاکہ عوام کو ان کے گھر کی دہلیز پر پینے کا صاف پانی میسر آسکے۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکومت فلٹریشن پلانٹ لگانے کی ذمہ دار ہوگی جبکہ اس کی مرمت اور دیکھ بھال مقامی مخیر حضرات کی ذمہ داری ہوگی۔ بعد ازاں وزیر مملکت نے پارک میں پودابھی لگا۔اس موقع پر علاقہ کے معززین کی بڑی تعداد بھی موجود تھی۔