پاکستانی برآمدات کے فروغ میں تمباکو کی صنعت سے منسلک بین الاقوامی کمپنیوں کے کردار کو سراہتے ہیں، عبدالرزاق د ائود

اسلام آباد۔11اکتوبر (اے پی پی):مشیر تجارت عبدالرزاق دائود نے پاکستانی برآمدات کے فروغ میں تمباکو کی صنعت سے منسلک بین الاقوامی کمپنیوں کے کردار کو سراہا ہے۔ وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت و سرمایہ کاری عبدالرزاق دائود نے تمباکو کے شعبہ میں کام کرنے والی بین الاقوامی کمپنیوں (ایم این سیز) کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ قومی برآمدات کے فروغ میں ان کا نمایاں حصہ ہے۔ مشیر تجارت عبدالرزاق دائود اور سر مایہ کاری بورڈ کی سیکرٹری فارینہ مظہر نے متحدہ عرب امارات میں برٹش امریکن ٹوبیکو (بی اے ٹی) کے ڈائریکٹر سے ملاقات کے دوران پاکستان میں سرمایہ کاری اور بر آمدات کے مواقع پر تبادلہ خیال کیا۔

سرمایہ کاری بورڈ کی جانب سے پیر کو یہاں جاری پریس ریلیز کے مطابق مشیر تجارت نے برٹش امریکن ٹوبیکو کے ساتھ اجلاس کی صدارت متحدہ عرب امارات میں کی جبکہ سیکرٹری سرمایہ کاری بورڈ بھی اجلاس میں شریک تھیں۔ مشیر تجارت نے بی اے ٹی کے پاکستان میں کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ بی اے ٹی کی ذیلی کمپنی پی ٹی سی پاکستانی برآمدات میں نمایاں حصہ رکھتی ہے۔ انہوں نے بی اے ٹی کے ڈائریکٹر کو یقین دلایا کہ برآمدات میں مزید اضافہ کیلئے وزارت تجارت اور سرمایہ کاری بورڈ ہر طرح کی ممکنہ معاونت فراہم کرے گا۔ عبدالرزاق دائود نے کہا کہ پاکستان نے دبئی ایکسپو میں گرین انرجی کے استعمال میں کلیدی کردار ادا کیا ہے

جبکہ پاکستان اپنی گو گرین مہم کو مزید وسعت دے رہا ہے۔ انہوں نے معاشی ترقی و خوشحالی کے حوالے سے حاصل اہداف پر بھی روشنی ڈالی۔ بی اے ٹی کے ایریا ڈائریکٹر برائے مشرق وسطی و جنوبی ایشیا سید جاوید اقبال نے تسلیم کیا کہ پاکستان کی حکومت انسانی وسائل کی ترقی، شفافیت، ٹیکنالوجی اور برآمدات کے فروغ کے حوالے سے جامع اقدامات کر رہی ہے۔

انہوں نے ملک کو مزید کاروبار دوست بنانے کیلئے حکومت پاکستان کی انتھک کاوشوں کو بھی سراہا۔ برآمدات کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے سید جاوید اقبال نے کہا کہ ان کی کمپنی آئندہ چند سال کے دوران اپنی برآمدات میں 100 ملین ڈالر تک اضافہ کیلئے پرعزم ہے جس سے ملک میں سرمایہ کاری کے ماحول کو مزید بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔