عالمی درجہ حرارت میں اوسط اضافہ کے مقابلہ میں براعظم ایشیاء میں درجہ حرارت بڑھنے کی شرح دوگنا زیادہ ہے، آئی ایم ایف

اسلام آباد۔13اکتوبر (اے پی پی):عالمی درجہ حرارت میں اوسط اضافہ کے مقابلہ میں براعظم ایشیاء میں درجہ حرارت بڑھنے کی شرح دوگنا زیادہ ہے۔ عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے میگزین فنانس اینڈ ڈویلپمنٹ (ایف اینڈ ڈی) کی رپورٹ کے مطابق درجہ حرارت بڑھنے کی وجہ سے ماحولیاتی، نقل مکانی اور آبی مسائل بڑھنے کے ساتھ ساتھ سطح سمندر بڑھنے کی وجہ سے ساحلی علاقوں کی مشکلات میں بھی اضافہ ہو رہا ہے۔

جس سے دیہی معیشت، غذائی عدم تحفظ اور برمدات بھی متاثر ہو رہی ہیں۔ رپورٹ میں ایشیاء و بحرالکاہل کے ممالک کو خبردار کیا گیا ہے کہ ماحولیاتی تغیرات کے مسائل سے تحفظ کیلئے بنیادی ڈھانچہ کی ترقی کے علاوہ فضائی آلودگی میں کمی اور پٹرولیم مصنوعات کے معیار میں بہتری کیلئے اقدامات کی ضرورت ہے۔

مزید برآں کلین پبلک ٹرانسپورٹیشن، سمارٹ الیکٹریسٹی اور متبادل ذرائع سے توانائی کے حصول کیلئے مربوط اور جامع حکمت عملی کے تحت اقدامات کی ضرورت کو بھی اجاگر کیا گیا ہے۔