ٹرانزیکشن بینکنگ خدمات کی فراہمی کے لئے میزان بینک کا ملر اینڈ فپس کے ساتھ معاہدہ

کراچی۔20اکتوبر (اے پی پی):پاکستان کے بہترین بینک میزان بینک نے ٹرانزیکشن بینکنگ خدمات فراہم کرنے کیلئے ملر اینڈ فپس پاکستان کے ساتھ ایک معاہدے پردستخط کئے ہیں۔ بدھ کو جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق اس معاہدے کے تحت میزان بینک اپنے اسٹیٹ آف دی آرٹ بینکنگ سلوشنز ای بز پلس(eBiz+) کے ذریعے ملر اینڈ فپس پاکستان کے نقد بہائوکی پوزیشن کو بہتر بنانے کے علاوہ ادائیگیوں کی پیچیدگیوں کو کم کرنے کے ساتھ ساتھ کمپنی کی وصولی اور ادائیگیوں کے نظام کومنظم کرنے میں مدد فراہم کرنے کیلئے نیا طریقہ کار وضح کرے گا۔

معاہدے پر ملر اینڈفپس کے منیجنگ ڈائریکٹر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر کامران نشاط اور میزان بینک کے گروپ ہیڈ کارپوریٹ اینڈ انسٹی ٹیوشنل بینکنگ عبداللہ احمد نے دستخط کئے۔ معاہدے کے مطابق میزان بینک ادائیگیوں اور وصولی کے پیچیدہ نظام کے بہائو کو خود کار بنانے کیلئے ملر اینڈ فپس پاکستان کو ٹرانزیکشنزبینکنگ خدمات فراہم کرے گا۔

بینک کا مربوط حل روائتی ادائیگیوں کے نظام کا مقابلہ کرنے ، مفاہمت میں آسانی اور نقد بہائوکے موئثر انتظام میں مدد فراہم کرے گاشاندار انٹیگریشن کے ساتھ ای بز پلس (eBiz+) ملر اینڈفپس کے شراکت داروں اور کلائنٹس کی ادائیگیوں کے بنیادی نظام کو بہتر بنائے گا۔

اس موقع پرمیز ان بینک کے گروپ ہیڈ کارپوریٹ اینڈ انسٹی ٹیوشنل بینکنگ عبداللہ احمدنے کہاکہ میزان بینک اور ملر اینڈفپس پاکستان کیش مینجمنٹ خدمات کو مزید آسان کرکے ڈیجیٹل تبدیلی کی راہ پر گامزن ہیں۔ یہ شراکت داری پاکستان میں کاروباری اداروں اور کارپوریٹس کیلئے جدید ڈیجیٹل کیش فلو مینجمنٹ کو تقویت فراہم کرے گی اورخود کار طریقے سے ملر اینڈفپس پاکستان کے کیش کلیکشن سائیکل کوتیز کرے گی جس کے نتیجے میں کاروباری آپریشنزمیں صارفین کے مجموعی تاثر کو بہتر بنایا جاسکے گا۔

ملر اینڈ فپس کے منیجنگ ڈائریکٹر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر کامران نشاط نے کہاکہ ملر اینڈفپس پاکستان کے پاس وسیع انفرا اسٹرکچر ہے اور ملک بھر کے 975سے زائد شہروں، قصبوںمیں 75ہزار سے زائد آئوٹ لیٹس تک رسائی ہے۔ ہم پاکستانی ڈیجیٹل مالیاتی ایکو سسٹم اور ادائیگیوں کے طریقہ کار میں نئے کاروباری مواقع تلاش کرنے کیلئے پرجوش ہیں جہاںپر میزان بینک اہم کردار ادا کررہاہے۔

ہمیں یقین ہے کہ میزان بینک کے ساتھ شراکت داری سے دونوں کمپنیوں کو ملکی کاروباری منظر نامے کے مختلف شعبوں میں ڈیجیٹلائزیشن کو فروغ دینے کیلئے مواقع میسر ہوں گے۔