پاکستان میں آٹو موبائل کا شعبہ تیزی سے ترقی کررہا ہے،چین میں پاکستانی سفیر معین الحق کا پاکستان آٹو موبائل انڈسٹری رائونڈ ٹیبل سیمینار سے خطاب

بیجنگ ۔ 20اکتوبر (اے پی پی):چین میں پاکستان کے سفیر معین الحق نے کہا ہے کہ پاکستان آئندہ پانچ برسوں کے دوران 6 تا 8 ملین آٹو موبائل یونٹس تیار کرنے کا منصوبہ بنارہا ہے جس کی اس وقت سالانہ پروڈکشن 250000 یونٹس ہے۔ بیجنگ میں پاکستانی سفارتخانہ میں ہونے والے پاکستان آٹو موبائل انڈسٹری رائونڈ ٹیبل سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ ایک بلند ہدف ہے تاہم پیداوار میں سالانہ اضافہ اور مختلف آٹو موبائلز کمپنیوں بالخصوص چین کی دلچسپی کے باعث اس ہدف کا حصول ممکن ہے۔ سیمینار میں چین کی مختلف علاقوں سے 50 سے زائد معروف آٹو موبائل کمپنیوں نے شرکت کی۔

سفیر نے کہا کہ پاکستان میں پہلے ہی بہت سی چینی کمپنیاں آٹو موبائل مینوفیکچرنگ کے شعبہ میں کام کر رہی ہیں جبکہ 10 کمپنیوں نے پاکستان میں سرمایہ کاری میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے جو نجی شعبہ میں اپنے مقامی پارٹنرز کے ساتھ جوائنٹ وینچر کے عمل میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ایک انتہائی پرکشش آٹو موبائل سیکٹر پالیسی لا رہی ہے جس کا جلد اعلان کیا جائے گا، نئی پالیسی کے تحت ٹیکسوں میں مزید مراعات دی جائیں گی۔

سفیر نے کہا کہ چین کی انرجی وہیکلز مینوفیکچررز سمیت آٹو موبائل کمپنیوں کو گرین فیلڈ اور برائون فیلڈ شعبوں میں پلانٹ قائم کرنے کی دعوت دی جائے گی۔ پاکستان میں آٹو موبائل شعبہ کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آبادی کے پیش نظر جو تقریباً 22 کروڑ ہے ،کے سبب بڑے مطالبہ کے باعث پاکستان میں آٹو موبائل کا شعبہ تیزی سے ترقی کررہاہے۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں جاپانی کمپنیوں نے اپنے پروڈکشن یونٹ قائم کئے تاہم حالیہ دور میں چینی کمپنیوں نے بھی پاکستانی آٹوموبائل مارکیٹ میں دستیباب مواقع کا جائزہ لینا شروع کردیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ چین اس وقت دنیا میں آٹوموبائل مینوفیکچررز کے لیڈرز میں شامل ہے جس کی انتہائی معیاری پراڈکٹس ہیں۔ پاکستانی سفیر نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ چینی کمپنیاں بھی پاکستانی آٹو موبائل مارکیٹ میں داخل ہوگئی ہیں۔ چائنا پاکستان اکنامک کوریڈور کے تحت مواقع سے آگاہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہہ بیلٹ اینڈ روڈ اینی شیٹو (بی آر آئی) کا فلیگ شپ پراجیکٹ دوسرے مرحلہ میں داخل ہوگیا ہے جو صنعت کاری، سائنس وٹیکنالوجی اور زرعی شعبہ پر مرکوز ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم خصوصی اقتصادی زونز قائم کررہے ہیں اور چینی سرمایہ کاروں کو اپنے مینوفیکچرنگ یونٹس قائم کرنے کی دعوت دے رہے ہیں پاکستانی سفیر نے کہا کہ چینی کمپنیوں کیلئے خصوصی مراعات اور پالیسیوں کا اعلان کیا گیا ہے اور اب تک تقریبا 100 چینی کمپنیاں خصوصی زونز میں اپنے یونٹس قائم کرنے کے عمل میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سڑکوں شاہرات اور کمیونیکیشن نیٹ ورک جیسا انفراسٹرکچر اپ گریڈ کیا جارہا ہے ۔

انہوں نے چینی کمپنیوں کو ان مراعات سے استفادہ کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی وسعت میں اضافہ کریں، اس موقع پر کمرشل قونصلر بدرالزمان نے آٹوموبائل کمپنیوں کے نمائندوں کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ سال 2021 ء تا 2026 ء کیلئے نئی آٹوموبائل پالیسی کا جلد اعلان کیا جائے گا جس میں ملکی اور غیرملکی سرمایہ کاروں کیلئے مزید مراعات اور فوائد کا اعلان کیا جائے گا۔