کراچی میں گرین لائن بس سروس کی حفاظت سندھ حکومت کی ذمہ داری ہے، گرین لائن کی حفاظت کیلئے فوج تو نہیں بلا سکتے،وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر

وزیراعظم عمران خان نے عوام کےلئے ا بڑے ریلیف پیکج کا اعلان کیا وفاقی وزیر اسد عمر کی زیر صدارت اجلاس، وزیراعظم کامیاب نوجوان پروگرام کے تحت ہنر سب نوجوانوں کے لئے پراجیکٹ کا جائزہاسد عمر

اسلام آباد۔22جنوری (اے پی پی):وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقی و اصلاحات اسد عمر نے کہا ہے کہ کراچی میں گرین لائن بس سروس کی حفاظت سندھ حکومت کی ذمہ داری ہے،

وفاق سندھ میں سڑکیں بنوانے کے علاوہ، نالوں کی صفائی اور کچرا اٹھانے کا کام کر رہا ہے، سندھ حکومت کچھ تو اپنا کام کرے، کراچی میں گرین لائن بس سروس کی سیکیورٹی کیلئے فوج تو نہیں بلا سکتے، اگر رینجرز بھی بلانی ہوتو وہ بھی سندھ حکومت بلا سکتی ہے، وفاق نہیں۔

ہفتہ کو نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی گزشتہ 14 سالوں سے سندھ میں حکومت کر رہی ہے لیکن اس نے کراچی کے شہریوں کو ایک بس بھی فراہم نہیں کی تاہم وفاق نے صوبے کے لوگوں کو جدید اور معیاری سفری سہولیات کی فراہمی کیلئے گرین لائن بس سروس شروع کی ہے، اب سندھ حکومت کو چاہیے کہ کم از کم اس کی حفاظت ہی یقینی بنائے۔

اسد عمر نے کہا کہ سندھ حکومت گرین بس سروس پر حملہ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کرے اور ذمہ داران کو مثالی سزا دے تاکہ مستقبل میں اسطرح کے واقعات دوبارہ رونما نہ ہوں۔

انہوں نے کہا کہ گرین لائن بس کے آغاز کے بعد ہزاروں کی تعداد میں لوگ روزانہ کی بنیاد پر جدید ٹرانسپورٹ کی سہولت استعمال کر رہے ہیں اسلئے صوبائی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ سروس کی سکیورٹی یقینی بنائے۔