ہ 50 ارب ڈالر کے مجوزہ ٹرسٹ فنڈ سے کم اور متوسط آمدنی والے ممالک کو ادائیگیوں کے توازن اور پائیدار اقتصادی ترقی میں مدد دی جا سکتی ہے، آئی ایم ایف

ہ 50 ارب ڈالر کے مجوزہ ٹرسٹ فنڈ سے کم اور متوسط آمدنی والے ممالک کو ادائیگیوں کے توازن اور پائیدار اقتصادی ترقی میں مدد دی جا سکتی ہے، آئی ایم ایف

اسلام آباد۔14مئی (اے پی پی):50 ارب ڈالر کے مجوزہ ٹرسٹ فنڈ سے کم اور متوسط آمدنی والے ممالک کو ادائیگیوں کے توازن اور پائیدار اقتصادی ترقی میں مدد دی جا سکتی ہے۔

اس سے ان ممالک کے اعتماد کو بھی فروغ حاصل ہوگا۔ عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے اپنے ایک بلاگ میں کہا ہے کہ 50 ارب ڈالر کے مجوزہ ٹرسٹ فنڈ کے قیام سے کم اور متوسط آمدن والے ممالک کو ادائیگیوں کے توازن کے مسائل اور پائیدار معاشی ترقی کے اہداف کے حصول میں معاونت فراہم کی جا سکتی ہے۔

کووڈ۔19سمیت مختلف ماحولیاتی و اقتصادی مسائل کا سامنا کرنے والے ممالک کو فنڈز کی فراہمی سے ان کے مسائل پر قابو پانے اور پائیدار اقتصادی ترقی میں مدد حاصل ہوگی۔

آئی ایم ایف نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی عالمی وبا نے ہمیں سبق دیا ہے کہ طویل المدتی مسائل کے خاتمہ کے بروقت اقدامات ہ کرنے سے مستقبل میں ادائیگیوں کے توازن سمیت دیگر معاشی مشکلات جنم لے سکتی ہیں جس سے کم اور درمیانی آمدن والے ممالک میکرو اکنامک استحکام کے مسائل پیدا ہونے کے علاوہ قدرتی آفات اور صنعتی و تجارتی سرگرمیوں سمیت روزگار کی فراہمی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

آئی ایم ایف نے کہا ہے کہ یہ مشترک عالمی مسائل ہیں جن کے خاتمہ کیلئے عالمی برادری پر مشترکہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے اور بہتر وسائل والے مالدار ممالک کم اور متوسط آمدن والے ممالک کے چیلنجز کے خاتمہ میں معاونت فراہم کریں تاکہ یہ ممالک ایسے مسائل کے خاتمہ کیلئے طویل مدت کیلئے اصلاحات کے قابل ہو سکیں۔ واضح رہے کہ عالمی مالیاتی فنڈ نے عالمی برادری کو 50 ارب ڈالر کے ٹرسٹ فنڈ کے قیام کی تجویز دی ہے