آنے والے دنوں میں پاکستان اور کینیڈا کے مابین باہمی تعلقات مزید مستحکم ہوں گے ، قائم مقام سفیر شہباز ملک

آنے والے دنوں میں پاکستان اور کینیڈا کے مابین باہمی تعلقات مزید مستحکم ہوں گے ، قائم مقام سفیر شہباز ملک

اٹاوا۔14مئی (اے پی پی):کینیڈامیں پاکستان کے قائم مقام سفیر شہباز ملک نے یقین ظاہر کیا ہے کہ آنے والے دنوں میں پاکستان اور کینیڈا کے مابین باہمی تعلقات کو مزید استحکام حاصل ہو گا اور سیاسی،معاشی،سکیورٹی اور ثقافتی میدانوں میں بھی باہمی تعلقات مزید ید گہرے ہوں گے جس سے دونوں ممالک اور عوام کو مشترکہ فوائد حاصل ہوں گے۔

انہوں نے اس امر کا اظہار پاکستان اور کینیڈا کے سفارتی تعلقات کے قیام کی 75ویں سالگرہ کے موقع پرکینیڈا کے دارالحکومت اٹاوا میں ایک قوالی نائٹ کے اہتمام پر کیا ۔جس کا انتظام پاکستان ہائی کمیشن کینیڈا نے کینیڈا میں اسمعٰیلی امامت کے وفد کے ساتھ اشتراک کے ساتھ کیا۔

ہفتہ کو یہاں موصول ہونے والی ایک پریس ریلیز کے مطابق تقریب میں کینیڈین سینٹ اور پارلیمنٹ کے ارکان،سفراء اور ہائی کمشنرز کے علاوہ پاکستان اور کینیڈا کی مقامی کمیونٹی کے سرکردہ ارکان کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔کینیڈین گلوبل افیئرزکے معاون ڈپٹی وزیر پال تھاپل اور کینیڈا میں آغا خان ڈویلپمنٹ نیک ورک کے نمائندہ ڈاکٹر محمود ایبو خصوصی طور پر شریک ہوئے اور تقریب سے خطاب کیا۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شہباز ملک نے کہا کہ پاکستان اور کینیڈا کے مابین سفارتی تعلقات قیام پاکستان کے فوراً بعد ہی قائم ہو گئے تھے اور گذرتے وقت کے ساتھ ان تعلقات میں وسعت آئی ہے اور دونوں ممالک میں دو طرفہ اور عالمی فورموں پر امن و سلامتی،ماحولیاتی تبدیلیوں اورکثیر الجہتی امور پرتعاون و شراکت جاری ہے۔

انہوں نے حالیہ سالوں میں کورونا وبا پر قابو پانے کے لیے کینیڈا کی جانب سے پاکستان کو فراہم کردہ امداد کو سراہا اور امید ظاہر کی کہ آنے والے دنوں میں سیاسی،معاشی،سکیورٹی اور ثقافتی میدانوں میں باہمی تعاون کو مزید بڑھاوا ملے گا۔انہوں نے کہا کہ قوالی پاکستان اور جنوبی ایشیا میں بہت مقبول ہے اور صوفیانہ کلام اور انوکھی موسیقی اور سر کی تال میل کی بدولت یہ صنف دنیا بھر میں متعارف اور مقبول ہو رہی ہے۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کینیڈین گلوبل افیئرزکے معاون ڈپٹی وزیر پال تھاپل نے کہا کہ کینیڈا اور پاکستان کے مابین گہرے باہمی تعلقات قائم ہیں جن کی بنیاد دونوں ملکوں کے عوام کے مابین باہمی روابط کی مضبوطی میں پنہاں ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اس وقت کینیڈا میں امیگریشن کے حوالے سے دنیا کا پانچواں بڑا ملک ہے اور اس وقت اڑھائی لاکھ کے قریب پاکستان نژاد کینیڈین شہری کنیڈا میں مقیم ہیں۔

انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے مابین مضبوط معاشی تعلقات قائم ہیں۔اس وقت دونوں ملکوں کی باہمی تجارت ایک اعشاریہ دو ارب ڈالر تک پہنچ چکی ہے۔انہوں نے خاص طور پر کینیڈین کمپنی بیرک گولڈ کی جانب سے حال ہی میں ریکو ڈک منصوبے کو نئے سرے سے شروع کیے جانے کے حوالے سے حکومت پاکستان اور حکومت بلوچستان کے ساتھ فریم ورک ایگری منٹ پر دستخط کیے جانے کا ذکر کیا جس کی بدولت کینیڈا پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے والے بڑے ترین ممالک میں شامل ہو جائے گا۔

انہوں نے اپنی تقریر میں پچھلے ایک سال میں دونوں ملکوں کے مابین اعلیٰ سطحی رابطوں بالخصوص دونوں ملکوں کے وزرائے خارجہ کے درمیان رابطوں اور کینیڈین ڈپٹی وزیر خارجہ کی جانب سے پاکستان کے دورے کا بھی ذکر کیا جس سے دونوں ممالک کے مابین گہرے باہمی تعلقات کی عکاسی ہوتی ہے۔