وفاقی وزیر خزانہ و ریونیو مفتاح اسماعیل کی زیر صدارت پاکستان کی تمام بڑی ایکسچینج کمپنیوں کے سربراہان کا اجلاس

اسلام آباد۔14مئی (اے پی پی):وفاقی وزیر خزانہ اور ریونیو مفتاح اسماعیل کی زیر صدارت ہفتہ کو پاکستان کی تمام بڑی ایکسچینج کمپنیوں کے سربراہان کے ساتھ ایک اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں فنانس ڈویژن سے ڈپٹی گورنر سٹیٹ بینک اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ اجلاس ملک میں زر مبادلہ کی شرح میں استحکام کے لئے بلایا گیا تھا۔

اس موقع پروزیر خزانہ نے حکومت کے پختہ عزم کو فاریکس مارکیٹ میں استحکام کو یقینی بنانے کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپیہ کو مستحکم رکھنے کے لیے مارکیٹ میکنزم میں کوئی مداخلت کئے ہر ممکن اقدامات کرنے کا عزم کیا ہوا ہے۔اجلاس میں مختلف تجاویز ایکسچینج کمپنیوں کے سربراہان کی طرف سے پیش کی گئیں۔ ایکسچینج کمپنیوں کو پاکستان کو ترسیلات زر کی منتقلی میں اضافہ کے حوالہ سے بھی بتایا گیا۔ ایکسچینج کمپنیوں کے سربراہان نے بڑی تعداد میں غیر رسمی چینلز کے ذریعے پاکستان سے غیر ملکی کرنسی کا بہاؤ روکنے کی تجویز بھی پیش کی۔

اس کے علاوہ، کچھ دیگر ٹھوس تجاویز / اقدامات ایکسچینج کمپنیوں کی طرف سے پاکستان میں غیر ملکی کرنسی کی پوزیشن کو بہتر بنانے کے کرنے کے لئے پیش کیا گیا تھا۔ ایکسچینج کمپنیوں کہ یہ اقدامات لاگو کیا جاتا ہے ۔ وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے ملک میں زر مبادلہ کی شرح میں استحکام کو یقینی بنانے کے لئے حکومت کے پختہ عزم کا اظہار کیا۔

انہوں نے شرکاء کو یقین دلایا کہ تمام ممکنہ اقدامات کی حفاظت اور پاکستان کی معیشت کو پاک روپیہ کی قدر میں بہتری لانے کے نتیجے میں مضبوط کرنے کا کام شروع کیا جائے گا۔ انہوں نے اعادہ کیا کہ موجودہ حکومت پاکستان کو ایک خوشحال اور ترقی یافتہ ملک بنانے کےلئے کام کر رہی ہے۔