اسلام آباد میں پاکستان ،آذربائیجان رمذاکرات سے تین شعبوں میں تعلقات اور تعاون کو فروغ حاصل ہو گا، صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی

اسلام آباد۔14جنوری (اے پی پی):صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے پاکستان اور آذربائجان کے درمیان تجارتی حجم بڑھانے اور ثقافتی وتجارتی تعاون کو مزید فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ اسلام آباد میں پاک ،آذربائیجان ،ترکی سہ فریقی مذاکرات سے سہ رخی تعلقات اور برادر ممالک کے مابین تعاون کو فروغ حاصل ہو گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے آذربائیجان کے وزیر خارجہ جیہون بیراموف سے بات چیت کرتے ہوئے کیا جنہوں نے جمعرات کو یہاں ایوان صدر میں ان سے ملاقات کی۔ صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان آذربائیجان کے ساتھ اپنے تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے جو مشترکہ عقیدے ، تاریخی اور ثقافتی روابط پر مبنی ہیں، صدر عارف علوی نے نگورنو کاراباخ کی آزادی پر آذربائیجان کی حکومت اور عوام کو مبارکباد پیش کی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان آذربائیجان کی علاقائی سالمیت کی حمایت کرتا ہے۔ صدر مملکت نے کہا کہ دونوں ممالک کے مابین تجارتی حجم بڑھانے اور ثقافتی وتجارتی تعاون کو مزید فروغ دینے کی ضرورت ہے، امید ہے کہ اسلام آباد میں پاک،آذربائیجان،ترکی سہ فریقی مذاکرات سے سہ رخی تعلقات اور برادر ممالک کے مابین تعاون کو فروغ حاصل ہو گا۔ صدر مملکت نے کشمیر پر او آئی سی رابطہ گروپ کے ممبر کی حیثیت سے آذربائیجان کے کردار کو سراہا۔ اس موقع پر آذری وزیرِ خارجہ نے نگورنو کاراباخ پر آذربائیجان کے موقف کی حمایت کرنے پر پاکستان کا شکریہ اداکیا۔ انہوں نے کہا کہ آذربائیجان مسئلہ کشمیر پر تمام بین الاقوامی فورمز پر پاکستان کے شانہ بشانہ کھڑا رہے گا۔ جیہون بیراموف نے کہا کہ پاکستان اور آذربائیجان کے مابین تجارتی اور ثقافتی تعاون میں اضافے کی صلاحیت موجود ہے۔