وزیراعظم عمران خان نے ریڈیو اسکول اور ای تعلیم پورٹل کا افتتاح کر دیا

اسلام آباد۔4دسمبر (اے پی پی):وزیراعظم عمران خان نے ریڈیو اسکول اور ای تعلیم پورٹل کا افتتاح کر دیا جبکہ وزیراعظم نے کہا ہے کہ ایک نصاب ایک قوم بنائے گا ،دینی مدارس کو قومی دھارے میں لانا ایک اہم خدمت ہے۔جمعہ کو وزیر اعظم نے ریڈیو سکول اور ایک تعلیم پورٹل کا افتتاح کیا،ریڈیو اسکول کا منصوبہ وزارت اطلاعات اور وزارت تعلیم کے اشتراک سے شروع کیا گیا ہے۔ اس سے ملک کے دور دراز علاقوں میں بھی کرونا وبا کی وجہ سے معطل ہونے والے تعلیمی سلسلہ کو بحال رکھا جا سکے گا۔تقریب میں وزیر تعلیم شفقت محمود، وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز، پارلیمانی سیکرٹری برائے تعلیم وجیہہ اکرم اور دیگر اعلی عہدے داران نے شرکت کی۔اس موقع پر وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پوری دنیا اس وقت کورونا کی وجہ سے مشکلات کا شکار ہے، اس وجہ سے تعلیمی عمل بھی متاثر ہوا ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ میں وزارت تعلیم اور وزارتِ اطلاعات کو مبارکباد پیش کرتا ہوں کہ انہوں نے تعلیم کے سلسلے کو جاری رکھنے کے لیے خاطر خواہ اقدامات اٹھائے ہیں جن سے تعلیمی عمل پر وبا کی وجہ سے پڑنے والے منفی اثرات میں کمی واقع ہوگی۔ وزیراعظم نےکہا کہ اس عمل میں جدید ٹیکنالوجی کا استعمال خوش آئند ہے۔ اس سے دور دراز علاقوں میں معیاری تعلیم پہنچانے میں مدد ملے گی۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ اب ہمیں خصوصی طور پر دور دراز علاقوں میں اساتذہ کی تربیت پر توجہ دینی ہوگی جس سے ان علاقوں کے تعلیمی معیار میں بہتری آئے گی۔وزیراعظم نے کہا کہ یکساں نصاب وزارت تعلیم کی ایک بہت بڑی کامیابی اور انقلابی قدم ہے۔اس سے نچلے طبقوں کو بھی تعلیم اور آگے بڑھنے کے یکساں مواقع میسر آئیں گے۔وزیراعظم نے نیشنل ایجوکیشن پالیسی کو بھی جلد سے جلد مکمل کرنے کی ہدایت کی۔ہے جبکہ فنی تعلیم بھی بہت ضروری ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ میں نے کہ میں نے گورنمنٹ کالج کے پہلے پرنسپل کی کتاب کا مطالعہ کیا جس میں میں انہوں نے لکھا ہے کہ اٹھارہ سو ستاون کے بعد د کیسے انگریزوں نے مسلمانوں کے تعلیمی نظام کو تباہ کیا ، اس وقت دینی مدارس میں ہندو اور سکھ بھی تعلیم حاصل کرتے تھے جبکہ یہاں پر جدید علوم پڑھائے جاتے تھے تاہم بعد ازاں دینی مدارس کو ائیسولیٹ کر دیا گیا۔وزیراعظم نے ہدایت کی کہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کو کو تعلیم کے حوالے سے ماڈل بنایا جائے۔وزیراعظم نے کہا کہ موجودہ تعلیمی نظام نچلے طبقے کو اوپر آنے سے سے روکتا ہے جبکہ ان کی صلاحیتوں کو محدود کرتاہے۔ٹیلی سکولنگ کے اقدام سے طلباء کے لئے دس گھنٹے کی نشریات جاری رہیں گی۔بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ ای تعلیم پورٹل کی ترویج کے لئے آگاہی مہم میں”فیس بک “وزارت تعلیم و پیشہ ورانہ تربیت کے ساتھ اشتراک کر رہا ہے۔اس مہم کا مقصد عوام الناس کو”ای تعلیم پورٹل”اور اس پر موجود تعلیمی مواد سے آگاہ کرنا ہے تا کہ طلباء اور والدین ان سے ہر ممکن فائدہ اٹھا سکیں۔