پاک روس وفود کی سطح پر مذاکرات انتہائی مثبت اور سود مند رہے،آنے والے دنوں میں دو طرفہ تعلقات پردور رس اثرات مرتب ہوں گے،وزیرخارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی

پاکستان، جرمنی کے ساتھ پارلیمانی سطح پر تعلقات میں وسعت دینے کا خواہاں ہے،وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی برلن ایئر پورٹ پر صحافیوں سے گفتگو
پاکستان، جرمنی کے ساتھ پارلیمانی سطح پر تعلقات میں وسعت دینے کا خواہاں ہے،وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی برلن ایئر پورٹ پر صحافیوں سے گفتگو

اسلام آباد۔7اپریل (اے پی پی):وزیرخارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاک روس وفود کی سطح پر مذاکرات انتہائی مثبت اور سود مند رہے،آنے والے دنوں میں دو طرفہ تعلقات پر، دور رس اثرات مرتب ہوں گے۔بدھ کو روسی وزیر خارجہ سرگئ لیوروف کے دورہ ء پاکستان کے حوالے سے اہم بیان میں شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ روسی وزیر خارجہ کا یہ دورہ غیر معمولی نوعیت کا تھا۔ہم نے دو طرفہ تعلقات کی تمام جہتوں اور موجود فریم ورکس کا جائزہ لیا ۔

ہم نے اتفاق کیا کہ دو طرفہ تعلقات کو وسعت دینے کیلئے، بین الحکومتی کمیشن اور دو طرفہ سیاسی مشاورت کے اجلاس رواں سال ماسکو میں بلائے جائیں۔انہوں نے کہا کہ نارتھ ساؤتھ گیس پائپ لائن منصوبہ، سال ہا سال سے پینڈنگ تھا جس پر ہم نے آمادگی کا اظہار کر دیا ہے ۔اس منصوبے کے راستے میں تمام اعتراضات دور کر دیے گئے ہیں۔

ماسکو میں تعینات پاکستانی سفیر کو اختیار دیا جا رہا ہے وہ اس حوالے سے ماسکو کی انرجی وزارت کے ساتھ معاہدہ پر دستخط کرنے کے مجاز ہوں گے ۔انہوں نے کہا کہ ریلوے اور توانائی کے شعبوں کو جدید خطوط پر ڈھالنے کیلئے وہ پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرنے پر آمادہ ہیں ۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ وہ اسٹیل مل، جس کی بنیاد انہوں نے رکھی تھی اس کو دوبارہ بحال کرنے کیلئے میں نے انہیں دعوت دی ہے۔انہوں نے کہا کہ روسی صدر پیوٹن کو وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے دورہ پاکستان کی دعوت دی گئی ہے۔روسی صدر دورہ پاکستان میں دلچسپی رکھتے ہیں ۔کرونا وبائی صورتحال میں بہتری کے بعد وہ پاکستان تشریف لانے کی خواہش رکھتے ہیں۔