اعلیٰ معیار کی ترقی کے لیے مقامی حالات کے مطابق نئی معیاری پیداواری قوتیں تیار کرنے کی ضرورت ہے، چینی صدر

Chinese President Xi Jinping
Chinese President Xi Jinping

بیجنگ۔6مارچ (اے پی پی):چینی صدر شی جن پنگ نے تکنیکی اور صنعتی تبدیلی کے نئے دور کے درمیان اعلیٰ معیار کی ترقی کے لیے مقامی حالات کے مطابق نئی معیاری پیداواری قوتوں کی تیاری کی ضرورت پر روشنی ڈالی۔ چینی اخبار چائنا ڈیلی کے رپورٹ کے مطابق انہوں نے چین کی اعلیٰ مقننہ 14ویں قومی عوامی کانگریس کے دوسرے سیشن میں جیانگ سو صوبے کے وفد سے اپنے ساتھی نائبین کے ساتھ بحث میں حصہ لیتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ نئی معیاری پیداواری قوتوں کی ترقی کا مطلب روایتی صنعتوں کو نظر انداز کرنا یا ترک کرنا نہیں ہے۔

انہوں نے نئی معیاری پیداواری قوتوں کو تیار کرنے بارے قیاس آرائیوں کے خلاف خبردار کیا۔ انہوں نے مقامی وسائل، صنعتی بنیادوں اور تحقیقی حالات کی بنیاد پر نئی صنعتوں، ماڈلز اور نئی محرک قوتوں کے منتخب فروغ پر بھی زور دیا۔ چینی صدر نے روایتی صنعتوں کو اپ گریڈ کرنے، صنعتوں کی اعلیٰ درجے کی ماحول دوست تبدیلی کو فروغ دینے کے لیے نئی ٹیکنالوجی سے فائدہ اٹھانے کی اہمیت پر بھی زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ ملک کو جدت پسندی کو تیز کرنے، ابھرتی ہوئی صنعتوں کو پروان چڑھانے اور مضبوط کرنے اور مستقبل کی منصوبہ بندی کے ساتھ صنعتوں کو فروغ دینے کے مواقع سے فائدہ اٹھانا چاہیے۔

چینی صدر نے کہا کہ صوبہ جیانگ سو میں نئی معیاری پیداواری قوتیں تیار کرنے کے لیے سازگار حالات اور صلاحیتیں موجود ہیں۔ انہوں نے صوبے کو ریڑھ کی ہڈی کے طور پر جدید مینوفیکچرنگ کے ساتھ جدید صنعتی نظام کی تعمیر پر توجہ دینے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے اعلیٰ معیار کی ترقی اور جدید چین کے لیے پائیدار رفتار کو آگے بڑھانے کے لیے اہم اصلاحات کو مزید جامع بنانے کی منصوبہ بندی کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ انہوں نے تکنیکی اور صنعتی جدت کے مضبوط انضمام پر زور دیا، روایتی صنعتوں کی سرکردہ پوزیشن کو مستحکم کرنے اور جیانگ سو کو نئی معیاری پیداواری قوتوں کی ترقی کے لیے ایک اہم گڑھ بنانے کے لیے صنعتی کلسٹرز کی تخلیق میں تیزی لانے پر زور دیا۔

انہوں نے کہا کہ اعلیٰ سطح کے سوشلسٹ مارکیٹ اکانومی کے نظام کو فروغ دینے کے لیے املاک کے حقوق کے تحفظ، مارکیٹ تک رسائی، منصفانہ مسابقت اور سماجی کریڈٹ کے حوالے سے نظام کو بہتر بنانے کی کوشش کی جانی چاہیے اور نجی معیشت اور نجی اداروں کی ترقی میں معاونت کی جانی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ سائنسی اور تکنیکی نظام اور تعلیم اور ہنر کے نظام میں مضبوط اصلاحات اور نئی معیاری پیداواری قوتوں کی ترقی کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنا ضروری ہے۔

چینی صدر نے کہا کہ اقتصادی بحالی کے مثبت رجحان کو مستحکم بنانے اور اس کے فورغ کے لیے بھی کوششیں کی جانی چاہئیں اور ترقی پر پورے معاشرے کا اعتماد بڑھانا چاہیے۔