الیکشن کمیشن نے آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے انعقاد کیلئے تیاریوں کو حتمی شکل دیدی

Election Commission of Pakistan
Election Commission of Pakistan

اسلام آباد۔12نومبر (اے پی پی):الیکشن کمیشن نے آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کے انعقاد کیلئے تیاریوں کو حتمی شکل دیدی ہے، انتخابات 8 فروری کو ہوں گے، ضلعی سطح پر انتخابی فہرستیں 15 نومبر تک مکمل کرلی جائیں گی، حتمی حلقہ بندیوں کی اشاعت رواں ماہ کے آخر تک ہوگی، سیاسی جماعتوں، میڈیا اور مبصرین کیلئے ضابطہ اخلاق کو حتمی شکل دیدی گئی ہے، کمیشن نے 34 میڈیا ورکشاپس کے علاوہ اب تک 707 طلبا کے اورینٹیشن سیشنز کا انعقاد کیا ہے، 10لاکھ سے زائد افراد کو پولنگ کے عمل کے لیے اندراج کرنے کے لیے بھی تیاریاں آخری مراحل میں ہیں، ملک بھر میں تعیناتی کے لیے پریزائیڈنگ افسران، اسسٹنٹ پریزائیڈنگ افسران اور پولنگ عملے کی فہرست کو حتمی شکل دی جا رہی ہے، ای سی پی نے بین الاقوامی مبصرین کے لیے ضابطہ اخلاق کو بھی حتمی شکل دی ہے۔

الیکشن کمیشن کے ترجمان کے مطابق الیکشن کمیشن اور اس کے ملک بھر میں انتخابی اہلکار، پولنگ ورکرز اور رضا کار مستعدی سے ایک ہموار اور شفاف انتخابی عمل کو یقینی بنانے کے لیے پرعزم ہیں۔ہم اس بات کو یقینی بنانے کے لیے تیاریاں مکمل کر رہے ہیں کہ جمہوریت کی بنیاد لوگوں کی نمائندگی پر منحصر ہے جہاں ہر ایک ووٹ کو تسلیم کیا جاتا ہے اور اس کی گنتی کی جاتی ہے۔ انہوں نے نومبر 2021 سے پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف لیجسلیٹو ڈویلپمنٹ اینڈ ٹرانسپیرنسی (پلڈاٹ) اور اقوام متحدہ کے ترقیاتی پروگرام (یو این ڈی پی)کے تعاون سے الکیشن کمیشن آف پاکستان کی طرف سے خاص طور پر طلبا کے ساتھ آگاہی کے مختلف سیشنز کے انعقاد کا ذکر کیا۔ای سی پی کے میڈیا کوآرڈینیشن اینڈ آئوٹ ریچ ونگ (ایم سی او) کی جانب سے سول سوسائٹی کی اہم تنظیموں کے تعاون سے 34 میڈیا ورکشاپس کے علاوہ اب تک 707 طلبا کے اورینٹیشن سیشنز کا انعقاد کیا جا چکا ہے۔

ان سیشنز میں خواتین، اقلیتوں، ٹرانس جینڈر افراد، معذور افراد، اکیڈمی، بلاگرز، رضاکار طلبا اور مقامی پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے شرکا کی ایک متنوع صف شامل تھی۔عام لوگوں کی آگاہی کے لیے لگ بھگ 26,000 ووٹر ایجوکیشن بروشر بلوچستان، 100,000 سندھ اور 30,000 خیبر پختونخوا میں بھیجے گئے۔ تیاریوں کے عمل میں، ای سی پی نے 8300 پر قومی شناختی کارڈ نمبر بھیج کر یا ان کے علاقے میں ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر کے دفتر کے ذریعے تصدیق کے ذریعے ووٹ کی حیثیت کی جانچ کرنے کے لیے ایک ایس ایم ایس سروس کا آغاز کیا، 30 نومبر کو سرکاری ریلیز کے لیے حلقوں کی حد بندی کو حتمی شکل دی جا رہی ہے۔

ای سی پی 10 لاکھ سے زائد افراد کو پولنگ کے عمل کے لیے اندراج کرنے کے لیے بھی تیار ہے کیونکہ ملک بھر میں تعیناتی کے لیے پریزائیڈنگ افسران، اسسٹنٹ پریزائیڈنگ افسران اور پولنگ عملے کی فہرست کو حتمی شکل دی جا رہی ہے۔ہمیشہ کی طرح، ای سی پی نے بین الاقوامی مبصرین کے لیے ضابطہ اخلاق کو بھی حتمی شکل دی ہے اور میٹا اور فیس بک کے ساتھ انتخابی عمل کے بارے میں آگاہی پیدا کرنے کے لیے حکمت عملیوں کی تلاش میں مصروف ہے۔دونوں تنظیمیں نتیجہ خیز بات چیت میں مصروف ہیں جس میں سماجی پولرائزیشن سے نمٹنے کے لیے فیس بک کمیونٹی کے معیارات کا اردو اور علاقائی زبانوں میں ترجمہ کرنا شامل ہے۔